مودی جی ملک کے ایسے اولین وزیر اعظم ہیں جن کے الفاظ کوئی قیمت نہیں رکھتے : راہل گاندھی

نئی دہلی4 فروری کانگریس صدر راہل گاندھی نے مودی کے وعدوں، دعووں اور اعلان پر شدید تنقید کی ہے ۔راہل نے ناگا امن معاہدے کو لے کر وزیر اعظم پر حملہ کرتے ہوئے کہا کہ مودی جی ملک کے ایسے پہلے وزیر اعظم ہیں جن کے لفظوں کوئی مول نہیں رہ گیا ہے۔ گویا راہل گاندھی نے مودی کے بیان کو مہمل تلفظ اور لاف گزینی سے تعبیر کی ہے ۔ کانگریس صدر راہل گاندھی نے مودی پرشدید تنقید کرتے ہوئے اپنے ٹوئٹر ہینڈل سے سوشل میڈیا کے ٹوئٹر پر لکھاکہ اگست 2015 میں مودی نے ناگا معاہدہ کرکے تاریخ رقم کرنے کا فریب کاری کی، فروری 2018 میں ناگا معاہدہ کہیں نظر نہیں آتا۔ مودی جی ملک کے ایسے پہلے وزیر اعظم ہیں جن کے الفاظ کا کوئی مطلب نہیں ہوتا۔ اگست 2015 میں ناگا معاہدے پر دستخط کرکے مودی نے تاریخ بنانے کا دعویٰ کیا تھا ۔ واضح ہو کہ راہل گاندھی کا یہ ٹوئٹ ایسے وقت میں آیا ہے جب بہت سے ناگا تنظیم اور سیاسی پارٹی ریاست میں انتخابات کرانے کی مخالفت کر رہے ہیں۔ ناگا اب انتخابات ٹال دینے کی کوشش کر رہے ہیں، تاکہ ناگا مسئلے کا جلد حل نکالا جا سکے۔ غور طلب ہے کہ مودی اور قومی سماجی کونسل آف ناگالینڈ (این ایس سی این) نے علاقے میں انتہا پسندی کو ختم کرنے کے لئے ناگالینڈ امن معاہدے پر اگست میں دستخط کئے تھے۔گزشتہ دنوں کانگریس لیڈر نے پی ایم پر الزام لگاتے ہوئے کہا تھا کہ مودی نے یکطرفہ فیصلہ کیا ہے۔ راہل گاندھی نے میڈیا سے بتایا تھا کہ کوئی بھی اس بات کو سمجھ نہیں پا رہا ہے کہ کیا انہوں نے ناگا معاہدے کو لے کر کوئی دستخط کئے ہیں۔ ناگا معاہدے کا فیصلہ بالکل اسی طرح تھا جیسے سال 2016 کے نومبر میں نوٹ بندی اورجی ایس ٹی۔