جماعت اسلامی کی دعوتی مہم کا پانچواں دن   ملک کے موجودہ حالات کے تحت ملاقات اور گفتگو کا سلسلہ جاری رکھنے پر زور

جماعت اسلامی کی دعوتی مہم کا پانچواں دن

ملک کے موجودہ حالات کے تحت ملاقات اور گفتگو کا سلسلہ جاری رکھنے پر زور

جماعت اسلامی کی مہم ’اسلام برائے امن ،ترقی و نجات ‘ گھریلو،دفاتر میں کام کرنے والی نیز معلمی کے فرائض ادا کرنے والی خواتین نے کہا کہ بات چیت سے ہی غلط فہمیاں دور ہونگی


ممبئی : جماعت اسلامی مہاراشٹر کی دس روزہ مہم ’اسلام برائے امن ،ترقی و نجات ‘کیلئے ارکان و کارکان کی مساعی عروج پر ہے ۔اسلام کے تعلق جاننے کے جذبہ نے انہیں مزید حوصلہ عطا کیا ہے ۔محمد ظفر انصاری ریاستی سکریٹری شعبہ تربیت نے بتایا کہ ’’مسلمانوں اور بردران وطن میں اسلام کی حقیقی تعلیم سے آگاہی کے شوق اور اس کیلئے جماعت کے ارکان کے استقبال سے یہ محسوس ہوتا ہے کہ لوگ پیاسے ہیں انہیں اسوہ نبوی ﷺ کے مطابق دعوت دین پہنچانے کی ضرورت ہے‘‘۔محمد ظفر انصاری جاری مہم کی برادران وطن میں پذیرائی پر ایک سوال کا جواب دے رہے تھے ۔ا میر مقامی اورنگ آباد واجد قادری نے اپنے ایک ویڈیو پیغام میں قرآن کی ایک آیت جس کا ترجمہ ’اس شخص سے بہتر کس کی بات ہو سکتی ہے جو اللہ کی طرف بلائے خود بھی نیک عمل کرے اور کہے کہ میں مسلمانوں میں سے ہوں ‘ ہے ۔ پیش کرتے ہوئے امت کو فریضہ یاد دلاتے ہوئے کہا کہ ہمارا فریضہ اسلام کی دعوت دینا ہے ۔انہوں نے کہا یہ ذمہ داری ہر کسی کی ہے نہ ہی یہ کسی خاص گروہ یا علاقہ تک محدود ہے بلکہ اس کے برعکس سارے مسلمانوں کے فرائض میں سے ہے ۔سابق سکریٹری شعبہ دعوت محمد سمیع نے کہا ’ہیمنت بھدانے جو کہ دھولیہ پترکار سنگھ کے صدرہیں نے جماعت اسلامی کے کارواں سے ملاقات میں اس تگ و دو اور کاوش کیلئے خوشی کا اظہار کیا اور کہا کہ آپ لوگ اپنے کام چھوڑ کر اتنا اہم کام انجام دے رہے ہیں ۔اس طرح کی کوششیں ملک کے مفاد میں ہے ۔انہوں نے یقین دلایا کہ ہمارا تعاون ہمیشہ آپ لوگوں کے ساتھ رہے گا ۔کارواں میں محمد سمیع ،ڈاکٹر جاوید مکرم ،واجد علی قادری ،سہیل امیر یوتھ ونگ کے کوآرڈی نیٹرشامل تھے ۔دھولیہ گرودوارہ میں بھی جماعت کے کارواں کا پرجوش استقبال کیا ۔دھولیہ کے ایس پی ایم رام کمار نے بھی خوشدلی کے ساتھ کارواں کا خیر مقدم کیا اور کہا کہ ہم سے آپ کو کیا تعاون چاہئے وہ بتائیں ،اس پر کارواں میں شامل افراد نے کہا کہ ہم تو آپ تک اللہ کے آخری دین کا پیغام پہنچانے آئے ہیں ۔
مہم کے پانچویں دن کارواں کلیان ،سولا پور،لاتور،عنبڑ،مالیگاؤں ،انجن گاؤں سورجی اور چندر پور میں اسلام کی دعوت برادران وطن میں دینے مصروف ہے ۔نیز جماعت اسلامی مسلمانوں کو بھی ان کے فریضہ کی یاد دہانی کیلئے ہمہ تن جہد کررہی ہے ۔ممبرا کی جماعت اسلامی کی ناظمہ انصاری مدینہ نے بتایا کہ انہوں نے جاری مہم ’اسلام برائے امن ،ترقی و نجات ‘ کے تحت اولڈ ایج ہوم تلوجہ میں ضعیف اور انتہائی ضعیف خواتین سے ملاقاتیں کیں ،ان سے احوال پوچھے اور ان میں وغیرہ تقسیم کئے۔انہوں نے بتایا کہ ان خواتین میں اکثریت ان کی تھی جنہیں ان کے شوہروں نے بے سہارا چھوڑدیا۔ان میں ناسک ،پونے سولا پور وغیر علاقوں کی خواتین تھیں۔انصاری مدینہ نے بتایا کہ حلقہ خواتین نے کلوا ہسپتال کے لیڈیز وارڈمیں بھی مریض خواتین سے ملاقات کی اور انہیں صحت و سلامتی کی دعاؤں سے نوازا ۔اس مہم کے تحت خواتین معلمہ سے بھی ملاقات کی ۔اکثر خواتین کی آراء تھی کہ موجودہ حالات میں ملاقات اور گفتگو کا سلسلہ جاری رہنا چاہئے۔گفتگو کے جاری رہنے سے ہی ہم ایک دوسرے کے مسائل سے آگاہ رہیں گے ۔