جماعت اسلامی مہاراشٹر کی 146اسلام برائے امن ،ترقی و نجات 145مہم شروع سب کا ساتھ سب کا وکاس کا خواب تب شرمندہ تعبیر ہوپائے گا جب غربت کی زندگی گزارنے والوں کی فلاح کے بارے میں پالیسی بنائی جائے

جماعت اسلامی مہاراشٹر کی 146اسلام برائے امن ،ترقی و نجات 145مہم شروع

سب کا ساتھ سب کا وکاس کا خواب تب شرمندہ تعبیر ہوپائے گا جب غربت کی زندگی گزارنے والوں کی فلاح کے بارے میں پالیسی بنائی جائے

ممبئی (12 ؍جنوری ):جب ہم معاشی ترقی کی بات کرتے ہیں تو اس کا مطلب یہ نہیں ہونا چاہئے کہ چند کمپنیوں یا چند گروپس کی ترقی ہو ۔یہ ہمارے لئے خوشی کی بات ہے کہ ہمارا ملک تیزی سے ترقی کرنے والے ممالک میں شامل ہے۔آج حکومت کا بھی نعرہ ہے سب کا ساتھ سب کا وکاس ،لیکن یہ اسی وقت ممکن ہو سکے گا جب سرمایہ یا دولت کی تقسیم منصفانہ ہو ۔آج ملک میں کروڑ پتی افراد کی تعداد بڑھی ہے ۔لیکن یہ بھی سچ ہے کہ یہاں ستر کروڑ افراد سطح غربت کے قریب زندگی گزارنے کو مجبور ہیں ۔ہم جب تک انہیں ذہن میں رکھ کر کوئی پالیسی ترتیب نہیں دیں ملک میں حقیقی ترقی کا دور نہیں آئے گا۔اسلامی معیشت کا اصول یہ ہے کہ دولت کمانا اہمیت کا حامل تو ہے لیکن یہ دولت کسی کو نقصان پہنچاکر نہیں کمائی جاسکتی ۔یہ ہے اسلام کا انسانی بہبود کا پیمانہ۔یہ باتیں جماعت اسلامی مہاراشٹر کی مہم 146اسلام برائے امن ،ترقی و نجات145کے موقعہ پر اپنے ایک ویڈیو پیغام میں بتائیں ۔ آج سے جماعت اسلامی مہاراشٹر کی دس روزہ مہم 146اسلام برائے امن ،ترقی و نجات 145شروع ہو گئی ہے ۔اس سلسلے میں ریاست کو سات مختلف اکائیوں میں تقسیم کیا گیاہے ۔ہر اکائی کیلئے علیحدہ کارواں ہے جس کے ساتھ مراٹھی کے مقررین بھی ہیں ۔ان مقررین میں کئی نو مسلم جنہوں نے دین حق کو پا یا اور اب وہ اس لئے کوشاں ہیں کہ اللہ کے دیگر بندے بھی اسلام کے آفاقی پیغام پر لبیک کہیں۔ایسے ہی ایک مراٹھی مقرر کا نام ڈاکٹر عمر کہاڑے ہیں ۔ انہوں نے بتایا کہ اسی کی دہائی میں اسلام قبول کیا تھا ۔اسلام کے عقیدہ توحید اور آخرت نے انہیں متاثر کیاتھا ۔ انہوں نے ممبئی میں کئی جگہ کارنر میٹنگ اور پولس اسٹیشن و سرکاری اداروں میں اسلام کا پیغام برادران وطن کو ان کی ہی زبان میں پہنچایا ۔ جماعت اسلامی مہاراشٹر کے میڈیا سیکریٹری ریحان انصاری نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ مہاراشٹر میں تقریبا نوے فیصد برادران وطن آباد ہیں کیا ہم نے انہیں اسلام کے پیغام سے متعارف کرایا ؟انہوں نے کہا کہ یہ بات ہم میں سے کتنوں کو پتہ ہے کہ انفرادی اور اجتماعی سطح پر دین کی دعوت دینا مسلمانوں پر فرض ہے ؟ایسے ہی سوالوں کا جواب لے کر جماعت اسلامی مہاراشٹر برادران وطن اور مسلمانوں کے درمیان مہم 146اسلام برائے امن،ترقی و نجات145 مہم کے ذریعہ آرہی ہے۔مرکزی طور پر جماعت اسلامی نے ناگپور کو لانچنگ پروگرام کیلئے منتخب کیا ہے جہاں ایک اجلاس عام کے ذریعہ آج مہم کا آغاز ہوا ۔اس کے علاوہ پونے میں اجلاس عام،اورنگ آباد اور امراوتی میں پریس کانفرنس ، ناندیڑ میں بھی پریس کانفرنس کا انعقاد کیا گیا۔ علاوہ ازیں مہاراشٹر کے کئی مقامات پر اجلاس عام اور کئی چھوٹے بڑے پروگراموں کے ذریعہ اسلام کی دعوت اور اس کے تئیں برادران وطن میں پھیلی غلط فہمیوں کو دور کرنے کی کوشش کی گئی۔پونے ناگپور اور ناندیڑکافیس بک پر لائیو پروگرام ٹیلی کاسٹ کیا گیا ۔ جسے جماعت اسلامی مہاراشٹر کے فیس بک پیج https://www.facebook.com/JihMPLACampaign/ پر پیش کیا گیا۔
ممبئی کی مصروف ترین زندگی کے سبب آج جماعت اسلامی کا کوئی بڑا اجلاس وغیرہ تو نہیں ہوا البتہ چھوٹے پیمانے پر جماعت کے ارکان و کارکنان نے لوگوں سے اجتماعی اور انفرادی ملاقات کا سلسلہ شروع کردیا ہے ۔ویسے جماعت اسلامی کے ارکان سال بھر اس طرح کی دعوتی سرگرمیوں میں مصروف رہتے ہیں ۔جماعت اسلامی کا بنیادی مقصد ہی اسلام کی دعوت برادران وطن تک پہنچانا ہے ۔آج جماعت نے کارنر میٹنگ ،پولس اسٹیشن اور دیگر سرکاری و نیم سرکاری اداروں ،تعلیمی کیمپس میں ملاقات اور مہم کی غرض و غایت بتانے کا کام شروع کردیا ۔ کئی مقامات پر اسلام کے تعلق سے آسان اور عام فہم زبان میں کتابوں کا اسٹال بھی لگایا گیاجس میں قرآن کے مراٹھی ہندی اور انگریزی تراجم کے علاوہ دیگر اسلامی کتب موجود تھیں۔فرقہ وارانہ ہم آہنگی کے تحت جماعت اسلامی مہاراشٹر کے سکریٹری برائے رابطہ عامہ عبد الحفیظ فاروقی اورممبئی میٹروکے سکریٹری ہمایون شیخ نے دادر گرودوارہ میں ملاقات کی ۔بھیونڈی میں لانچنگ پروگرام صنوبر ہال نزد باغ فردوس مسجد میں ہوا ۔یہاں عمائدین شہر کو مہم سے متعارف کرایا گیا اور امت مسلمہ کی ذمہ داری بتائی گئی ۔ڈی سی پی منوج جے پاٹل سے ملاقات میں انہوں نے کہا کہ یہ اچھا کام ہے اس سے ہماری امن قائم کرنے کی کوششوں میں مدد ملے گی ۔انہوں نے پولس ہال میں میٹنگ کی اجازت دی جس میں سارے پولس اسٹیشن سے پولس اہلکار کے سامنے اسلام کی حقیقی تعلیم پیش کی جائے گی یہ پروگرام 17 ؍جنوری کو منعقد ہوگا۔ڈپٹی پولس کمشنر اور کارپوریشن کمشنر سے ملاقات میں بھی ہوئی ۔بھیونڈی بار کاؤنسل میں بھی دعوتی ملاقات کا وقت طے ہے ۔