کرناٹک کے چیف منسٹر سدارامیا کے قافلہ کو گزرنے کیلئے ایک ایمبولنس کو روک دیا گیا مریض ایمبولنس سے اُتر کر تقریبا100میٹر پیدل چل کراسپتال پہنچا۔

بیدر، 23 نومبرکرناٹک کے چیف منسٹر سدارامیا کے قافلہ کو گزرنے کیلئے ایک ایمبولنس کو روک دیا گیا ۔ایمبولنس ایک مریض کو لے کر جارہی تھی۔ معاملہ کرناٹک کے منڈیا ضلع کے ناگامنگلم کا ہے ۔سدارامیا کا قافلہ وہاں سے گزرنا تھا جس وجہ سے ایک سائیڈ سے راستے کو بند کردیا گیا۔ ایسے میں ایمبولنس کو بھی بیریکٹس کے پاس روک دیا گیا ۔مریض کے ساتھ ایمبولنس میں موجود لوگوں نے وہاں کھڑے پولیس ملازمین سے ایمبولنس کو راستہ دینے کی گذارش کی لیکن پولیس ملازمین نے سیکوریٹی کی وجہ کا حوالہ دیتے ہوئے راستہ دینے سے انکار کردیا ۔ایسے میں مریض وہیں ایمبولنس سے اُتر گیا اور تقریبا100میٹر پیدل چل کراسپتال پہنچا۔ایسا پہلی بار نہیں ہوا ہے جب کسی وی آئی پی کے قافلہ کیلئے ایمبولنس کو ایسا روکا گیا ہے ۔جون2016ء میں بھی سدارامیا کے قافلہ کی وجہ سے ایک ایمبولنس کوتقریباََ30منٹ کھڑے رہنا پڑا تھا۔