بہار کے کھگڑیا میں ایک سنسنی خیز واردات میں چار نوجوانوں کی گولی مار کر قتل کر دیا والی بال میچ کے بہانے بلا کر چار نوجوانوں کا قتل، دریا برد کیں لاشیں

پٹنہ 19نومبر
بہار کے کھگڑیا میں ایک سنسنی خیز واردات میں چار نوجوانوں کی گولی مار کر قتل کر دیا گیا اور ان کی لاش دریا میں بہا دی گئی۔ یہ چاروں نوجوان 13 نومبر سے لاپتہ تھے۔ بھاگلپور کے نوگچھیا علاقے کے ان چار نوجوانوں کو والی بال میچ کے بہانے گھر سے بلا کر قتل کئے جانے کا انکشاف ہوا ہے۔ ان چاروں کی کھگڑیا ضلع کے چھوٹی اڑنگا میں دریا کنارے گولی مار کر قتل کر دیا گیا۔ ہلاک نوجوان کی عمر تقریبا 20سال سے 25سال کے درمیان ہے ۔ واضح ہو کہ 13 نومبر کو بھاگلپور کے نوگچھیا پولیس کو چار نوجوانوں کی گمشدگی کی اطلاع ملی تھی، ان نوجوانوں کو والی بال کھیلنے کے لئے نو گچھیا۔کھگڑیا سرحدی گنگا علاقہ میں تحریری نوٹس دے کر اغوا کی شکایت درج کرائی گئی تھی ۔ ہفتہ کو گمشدہ نوجوانوں کی تلاش میں دیارا علاقہ کی خاک چھان رہی پولیس کو ندی کنارے خون آلودہ کپڑے ملنے کے بعد معاملہ کا انکشاف ہوا۔ پولیس اب ان چاروں کی لاش تلاش کرنے میں لگی ہے۔ ادھر اس معاملے میں ایک نوجوان روہت کمار کو گرفتار کیا گیا ہے۔ راہل اس علاقے کو بدمعاش پنٹو جھا گروہ کا آدمی بتایا جا رہا ہے۔ پنٹو جھا بدنام مجرم کیلاش جھا کا بھائی ہے، جس کاقتل پانچ سال پہلے گوری پور میں کردیا گیا تھا۔ کیلاش کے قتل کے بعد گینگ کا سرغنہ پنٹو جھا بنا۔کچھ دن پہلے ان نوجوانوں کو کھیلنے کو لے کر ہی تنازعہ ہوا تھا اور خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ اسی تنازعہ کی وجہ سے ان کے قتل کی منصوبہ بندی ہوئی تھی۔ ضلع کے ایس پی سدھیر کمار نے بتایا کہ گرفتار نوجوان سے پوچھ گچھ کی جا رہی ہے۔