بی جے پی بدعنوانی کی گنگوتر ی ہے : آشوتوش آپ ترجمان لکھنؤ، 13 نومبر:

عام آدمی پارٹی نے آج مرکز اور اتر پردیش میں حکمران بی جے پی کوبدعنوانی کی گنگوتری بتاتے ہوئے اس کی طرف سے بلدیاتی انتخابات کیلئے جاری منشور کوجھوٹ کا پلندہ قرار دیا ۔آپ کے قومی ترجمان آشوتوش نے یہاں پریس کانفرنس میں کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ بی جے پی بدعنوانی کی گنگوتری بن گئی ہے۔ دیگر جماعتوں کے بدعنوان لوگ بی جے پی میں شامل ہو رہے ہیں۔ چاہے یہ نارائن ہو ں یا مکول رائے ہی کیوں نہ ہو ۔نارائن رانے جب تک کانگریس میں تھے جب تک وہ بدعنوان تھے ؛لیکن جیسے ہی انہوں نے بی جے پی میں شمولیت اختیار کی، وہ پاک و صاف ہوگئے ۔آشوتوش نے کہا کہ اس طرح کی سینکڑوں مثالیں ہیں ۔انہوں نے بی جے پی کی طرف سے شہری بلدیاتی انتخابات کیلئے کل جاری منشور کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ یہ اچھا ہے ا س میں بی جے پی نے عام آدمی پارٹی کی نقل ہے، لیکن دراصل یہ جھوٹ کا پلندہ اور لوگوں کی آنکھوں میں دھول جھونکنے والا انتخابی منشور ہے ۔ آشوتوش نے کہا کہ بی جے پی شہری اداروں کو بدعنوانی سے آزاد کرانے کے دعوے کر رہی ہے ۔ جبکہ زیادہ تر شہری اداروں کی طاقت اسی پارٹی کے ہاتھوں میں رہی ہے۔ یہ پارٹی مرکز اور اتر پردیش میں مضبوط ہے ۔لیکن حالات یہ ہیں کہ گورکھپور، جو وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کے پارلیمانی علاقہ میں ہے ۔ وہاں کے سرکاری ہسپتال میںآکسیجن کی کمی سے 60 بچوں کی موت ہو گئی ؛لیکن یوگی ذمہ داری لینے سے انکار کر رہے ہیں ۔آپ ترجمان نے کہا کہ ایسا پہلی بار دیکھا جا رہا ہے کہ کوئی وزیر اعلی شہری بلدیاتی انتخابات میں 32 عوامی جلسوں سے خطاب کرنے جا رہا ہیں اس سے واضح ہو تا ہے کہ انہیں شکست کا خوف سمایا ہوا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وارانسی وزیر اعظم نریندر مودی کا انتخابی حلقہ ہے ،کوئی بھی وہاں کی سڑکوں کی حالت دیکھ سکتا ہے ،کئی جگہ تو سڑکیں ہی نہیں ہیں اور حد تو یہ ہے کہ یہ شہر ملک کے سب سے آلودہ شہروں میں شامل ہے۔آپ ترجمان نے لکھنؤ کے سابق میئر اور اس وقت ریاست کے نائب وزیر اعلی ڈاکٹر دنیش شرما پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ شرما کے ہی دور میں لکھنؤ میونسپل کارپوریشن میں ایک ہزار کروڑ روپے کا ای ٹنڈر گھوٹالہ ہوا۔ اس کے علاوہ 300 کروڑ روپے کا بھی گھوٹالہ ان کے ہی دور میں ہواہے ۔