سرسید احمد خان ایک تحریک کا نام ہے! حاجی فضل الرحمان

سہارنپور (آمنا سامنا میڈیا ؍ احمد رضا)

سر سید احمد خاں کسی ادارے ہی کے بانی نہی بلکہ سر سید ایک ایسی شخصیت تھی کہ جس نے اپنے فکر اور عمل سے دنیا کے سینے پر ایسا علمی چراغ روشن کیا کہ جس کی روشنی عالم کے ہر چھوٹے بڑے شہر کو روشن کر رہی ہے آج اے ایم یو سے فارغ ہزاروں طالب علم یہی کمال دکھا رہے ہیں علیگڑھ سے اٹھنے والی روشنی پورے عالم میں علمی روشنی پھیلا رہی ہے یہی سر سید کی دانش مندی کا ناقابل فراموش کارنامہ ہے اسی خوبی اور قابلیت کے نتیجہ میں گزشتہ سات دنوں سے یہاں کمشنری میں لگاتار سر سید کی حیات مبارک پر لگاتار تعلیمی سمینار منعقد کئے جارہے ہیں! مقامی امبالہ روڑ پر کل دیر شام ایک ہال میں شاندارتقریب میں سر سید احمد خاں کی علمی خدمات پر ا پنے اہم خیالات کا اظہار کرتے ہوئے علیگڑھ سے فارغ طالب علم اور یوپی کے نامور تاجر حاجی فضل الرحمان نے کہاکہ سرسید ایک تحریک کا نام ہے ہم جس زمانہ میں اے ایم یو میں زیر تعلیم تھے تو دیکھا جاتاتھاکہ اس وقت کا تعلیمی معیار دیکھنے لائق تھا اور آج تو وہ نظام اور بھی بہتر ہوچکاہے ، حاجی فضل الرحمان نے کہاکہ سرسید خان نے جس اسکول کی بنیاد ایک صدی قبل کی وہ انکی نیک نیتی پر مبنی تھی اسیلئے آج وہ اسکول اے ایم یو کے نام سے پوری دنیامیں روشنی پھیلا رہاہے آپنے کہاکہ اے ایم یو سر سید احمد خانؒ کا ایک ناقابل فراموش کارنامہ ہے!
سرسید خاںؒ کے ۲۰۰ویں یوم پیدائش کے موقع پر کل د یر شام شاندار تقریب میں سرسید علی خاںؒ کی زندگی اور تعلیمی جدوجہد پر تفصیل سے روشنی ڈالتے مہمانوں نے سرسید کو تعلیم کا مسیحا اور قوم کا ہمدرد بتاتے ہوئے سر سید خاں کے عظیم کارناموں اور علمی جدوجہد کی بھر پور سراہناکی مسلم اسکالر اور عالم دین امین جامعہ مظاہر العلوم مولانا شاہد الحسنی نے بانی اے ایم یو سرسید احمد خاںؒ کو تعلیمی خدمات کا مضبوط ستون اخلاص کا علمبردار اور تعلیمی خوبیوں کا دریا قرار دیا مولانا شاہد الحسنی نے بانی اے ایم یو سرسید احمد خاںؒ کی خدمات پر اپنے تجربات کی بنیاد پر کہاکہ جس ادارے کی بنیاد سر سید احمد خاںؒ نے ایک صدی قبل رکھی آج وہ ادارہ عالم میں جگمگا رہاہے اور پورا ملک اسکی روشنی سے فیض حاصل کر رہاہے یہی تعریفی کلمات سر سید کی شخصیت کو چار چاند لگا نیکے لئے کافی ہیں!
اس موقع پر سوشل کارکن اور بہت سی سوشل تنظیموں کے سرپرست صحافی ڈاکٹر شاہد زبیری اور عارف عثمانی علیگ نے سرسید خاں ؒ کے اے ایم یو سے وابسطہ کار خیر پر تٖفصیلی روشنی ڈالتے ہوئے کہاکہ ہم نے اس تقریب کو صرف اور صرف اس مقصد سے ہی منعقد کیاہے تاکہ آج بانی اے ایم یو سرسید علیخاںؒ کو تعلیم ، قومی خدمات اور تعلیمی خوبیوں پرروشنی ڈالی جائے تاکہ ہماری نئی نسل سر سید کی خوبیوں سے فیض حاصل کر سکے اور آپکے ادارے کے تعلیمی معیار سے روشنی حاصل کرتے ہوئے اس روشنی کو دور دور تک پھیلانیکا کام انجام دیں آپنے کہاکہ علم ہی دنیاکے تمام مسائل کاحل پیش کرسکتاہے اور علم ہی انسانیت کی پیاس بجھاسکتاہے! اس تقریب میں درجن بھر طالب علموں نے اپنے اپنے خوبصورت انداز میں ترانہ، تقاریر اور نظم پرھ کر مہمانان تقریب سے کافی داد حاصل کی بعد ازاں م،نتظمین اور مہمان خصوصی نے بچوں کو انعام و اعزازات سے نوازا اور انکے حوصلہ کی تعریف کی!