عالمی تنظیم برائے فضلائے ازہر شاخ ہند کے زیر اہتمام منعقد کانفرنس میں شریک علماء ودانشوران کا امن وسلامتی اور پر امن بقائے باہمی کے فروغ پر زور حضرت مولانا ولی رحمانی سمیت متعدد نمایاں اسلامی ومذہبی شخصیات کی شرکت

اسلام امن وسلامتی ،  اخوت ومحبت اور امن و آشتی کا مذہب ہے ، انتہاپسند اور دہشت گرد تنظیموں    سے اسلام کا کوئی تعلق نہیں ، اور جامعہ ازہر کا پیغام اخوت و بھائی چارگی    اور  سلامتی    کی دعوت     نفرت و عداوت کے بڑھتے ہوئے  واقعات کی روک تھام کی سمت میں    ایک اہم قدم ،    اور جامعہ ازہر کی دینی ، علمی ، فکری ، ثقافتی ، سماجی اور اصلاحی خدمات    نا قابل فراموش ہیں ، ان خیالات کا اظہار  عالمی تنظیم    برائے فضلائے ازہر کے  زیر اہتمام منعقد عالمی پیس کانفرنس میں   صدارتی کلمات کے دوران  حضرت مولانا ولی رحمانی صاحب نے کیا ،  قومی راجدھانی  دہلی میں  انڈیا اسلامک کلچر سنٹر میں   منعقد اس امن کانفرنس  میں  ہندوستان کی متعدد علمی ، فکری ، سماجی اور سیاسی شخصیات نے شرکت کی ،اور مصر جامعہ ازہر سے  تشریف لائے ہوئے مہمانوں میں جامعہ  ازہر کے ڈین   فیکلٹی آف   لینگویجیز اینڈ ٹرانسلیشن  ڈاکٹر یوسف عامر نے اپنے خطاب میں  کہا کہ آج امن وسلامتی اور پرامن بقائے باہم کے پیغام کو عام کرنا وقت کی ایک اہم ضرورت ہے ،  اور انسانی معاشرہ اس کے بغیر  امن وامان کی دولت سے محروم ہی رہیگا اور انہوں نے اس موقعہ پر    جامعہ ازہر کی جانب سے انتہا پسندانہ اور دہشت گردانہ افکا رونظریات کی  روک تھام کے لئے کی جانی والی کوشسوں  کے بارے   میں بتایا کہ  متعدد ایسے ادارے قائم ہیں جو شب وروز ان افکار کا رد کرنے کیلئے سرگرم عمل ہیں جسمیں ازہر آبزیروٹری قابل ذکر ہے جو سوشل میڈیا اور دیگر وسائل ابلاغ کے ذریعہ مختصرپپغام کے ذریعہ  نوجوانوں کی رہنمائی کرتی ہے   ، انکے علاوہ  جلیل القدر عالم دین  ڈاکٹر سیف رجب  قزامل نے اپنے خصوصی کلمات میں کہا کہ آج اس بات کی سخت ضرورت ہیکہ  اسلامی تعلیمات جو امن و آشتی،  اخوت و محبت اور انسانی اصول واقدار ، اور آپسی رواداری کی  تعلیمات پر مبنی ہے اسکو فروغ دینا اور نفرت وعداوت کی سرحدوں کو ختم کرنا ہی  اسلام کا طرہ  امتیاز ہے ،  اور جامعہ ازہر  کے فارغین  اس اعتدال اور میانہ روی  کے قلعہ سے تعلق رکھنے  کی بنیاد پر وہ اس بات کے زیادہ اہل ہیں کہ  اس پیغام کو لیکر آگے بڑھیں ،  آج فضلائے ازہر ہند کی جانب سے منعقد یہ کانفرنس  اسی سلسلے کی ایک سنہری کڑی ہے ،

پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے  ڈاکٹر ظفر الاسلام صاحب نے کہا کہ  آج امت مسلمہ جس انتشار اور افراتفری کا شکار ہے ایسے  وقت   میں جامعہ ازہر کا پوری امت مسلمہ کی قیادت کے لئے آگے آنا  انتہائی خوش آئند قدم  ہے،اور ضرورت اس بات کی ہے کہ جامعہ  ازہر کی آواز پر لبیک کہتے ہوئے اس امن وسلامتی اور اتحاد واتفاق کے کارواں کو آگے بڑھایا جائے ،   اسی پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے  ڈاکٹر انوار احمد بغدادی نے کہا کہ امن وسلامتی اور پر امن بقائے باہم کے موضوع پر یہ کانفرنس قابل ستائش ہے اور  جس طرح  عالمی تنظیم برائے فضلائے ازہر شاخ ہند نئی دہلی نے ازہر کے بینر تلے تمام مکاتب فکر اور مذاہب کے  لوگوں کو اکھٹا کیا ہے  وہ قابل ستائش قدم ہے ، اور پروگرام میں شریک محترم سوامی اگنیویش صاحب نے  اپنی تقریر میں بھائی چارگی اور اخوت و محبت اور کمزوروں کی داد رسی  پر زور دیا ، اسی طرح ڈاکٹر شفیق احمد خان صاحب سابق صدر شعبہ جامعہ ملیہ اسلامیہ  نے مذکورہ تنظیم کو اس اہم کانفرنس کے  انعقاد پر مبارکباد پیش کرتے ہوئے  کہا کہ آج نفرت وتشدد کے ماحول میں اخوت ومحبت اور پر امن بقائے باہم کو فروغ دینے کی  ضرورت ہے، ان حضرات کے علاوہ پروگرام سے خطاب کرنے والوں میں ڈاکٹر  قاسم رسول الیاس صدر ویلفیر پارٹی اور  جواہر لال یونیورسٹی کے شعبہ اردو کے صدر ڈاکٹر خواجہ اکرام الدین شامل ہیں  ، پروگرام  میں ان کے علاوہ جناب سراج الدین قریشی اور جناب انیس درانی صاحب  کنوینر  نیوز واچ آل انڈیا کانگریس کمیٹی نےبھی شرکت کی ،تنظیم کے صدر ڈاکٹر مبین  سلیم ازہری استاذ مسلم یونیورسٹی علی گڑھ نے  اپنے افتتاحی کلمات میں تمام مہمانوں کا  خیر مقدم  کیا اور ازہر کے اس امن وسلامتی اور پرامن بقائے باہم کے فروغ میں ان کے تعاون اور دلچسپی کے لئے انکا شکریہ ادا کیا ،  تنظیم کے جنرل سکریٹری ڈاکٹر محمد شہاب الدین ازہری نے   کلمات  تشکر پیش کیا  جبکہ عربی نشست کی نظامت کے فرائض محمد فضل الرحمن ازہری اور غوث محمد ازہری نے دیئے اور اردو کی نظامت کے فرائض  مولانا سراج الہدی ازہری اور عبد المعید ازہری نے  دیئے ، اس موقع پر چند فضلاء ازہر کو انعامات سے بھی نوازا گیا  اس موقع پر ازہری فضلائے کی ایک بڑی تعداد  ہندوستان کے مختلف صوبوں سے شریک ہوئے  اور اس موقع پر مولانا سراج الہدی ازہری کی تحقیق شدہ کتاب ” آسان ترجمہ وتفسیر قرآن مجید کا رسم اجراء بھی عمل میں آیا  ،  اس پروگرام   کو کامیاب بنانے میں  مولانا عبد الرحمن انیس قاسمی اور نور الاسلام صاحب کا خصوصی تعاون رہا  ، ان حضرات کے  علاوہ    محمود غازی ازہری اور رئیس الدین ازہری ، صدیق حسن ازہری وغیرہ نے  بھی پروگرام  کو کامیاب بنانے میں کافی  دلچسپی کا اظہار کیا ِ ۔

ہم آپکے شکر گذار ہونگے

والسلام

کانفرنس کو آرڈینیٹر  : محمد فضل الرحمن ازہری

دفتر عالمی تنظیم برائےفضلائے ازہر (شاخ ہند نئ دہلی )