بحری راستوں سے عازمین حج کوبھیجنے کی تجویززیرِغور ،نئی حج پالیسی کااعلان جلدہوسکتاہے۔

نئی دہلی یکم اکتوبر:اس ہفتے حج کے لیے ہوائی جہازکے علاوہ کسی اورراستے سے عازمین حج کوبھیجنے کے لیے نئی حج پالیسی کااعلان ہوسکتاہے۔سرکاری ذرائع نے کہا کہ اس پالیسی کی اہم بات دو دہائیوں سے زائد عرصے سے وقفے کے بعدسمندرکے راستہ کے ذریعہ جدہ بھیجنے کامتبادل بحال کرناہے۔ یہ سمجھا جاتا ہے کہ اس پالیسی کو اگلے سال سے نافذکیاجائے گا۔حکومت کا خیال ہے کہ سمندر کے راستے سے سفر کی قیمت کم ہو جائے گی۔ذرائع نے بتایا کہ اگرچہ حجاج مکہ مدینہ کے سفر میں ملک کے 21 ہوائی اڈوں سے سفرکرسکیں گے۔انہوں نے کہا کہ پالیسی میں بھی شامل ہے کہ ایک شخص زندگی میں ایک بار حج پرجائے۔ذرائع نے کہاکہ یہ سپریم کورٹ کے حکم کے مطابق ہے اور سعودی عرب حج کے لیے بھیجنے کاسستامتبادل ہے۔ذرائع نے بتایا کہ جہاز ایک وقت میں4000 سے5000 افراد لے جاسکتاہے۔سعودی عرب نے اس سال کے حج کوٹا 1.36 لاکھ سے1.70 لاکھ تک بڑھایا۔ گزشتہ سال تقریباََ 1.35 لاکھ ہندوستانی حج کے سفر پرگئے ہیں۔