مولاناڈاکٹر طاہرالاسلام قاسمی کی والدہ کے انتقال پر دعائیہ مجلس

سہارنپور23؍ستمبر( احمد رضا):معروف عالم دین ،صحافی اور مصنف مولاناڈاکٹر طاہرالاسلام قاسمی کی والدہ کے انتقال پر مدرسہ معارف القرآن وجامعۃالطیبات میں ایک تعزیتی میٹنگ منعقد ہوئی جس کی صدارت جامعہ کے شیخ الحدیث مولانامحمدیعقوب سیتاپوری نے کی ۔اس موقع پر دونوں اداروں میں قرآن خوانی کرکے مرحومہ کے لئے ایصال ثواب بھی کیاگیا۔آل انڈیادینی مدارس بورڈ کے قومی صدر وجامعۃالطیبات کے ناظم مولانامحمدیعقوب بلندشہری نے حج کے سفرسے ہی فون کے ذریعہ گہرے رنج وغم کا اظہارکرتے ہوئے کہاکہ مولاناڈاکٹر طاہرالاسلام قاسمی کی والدہ ایک نیک سیرت صوم وصلوٰۃ کی پابندخاتون تھیں انہوں نے اپنی زندگی میں اپنے شوہرمبلغ اسلام مولانامحمداسلام قاسمی کی بیحدخدمت ومدد کے ساتھ ساتھ مولاناکے مشن کو بھی مستعدی کے ساتھ چلائے ہوئے تھی،دینی تعلیم وتربیت کے ساتھ ساتھ دعوت وتبلیغ کے کام میں بھی نمایامقام رکھتی تھیں مرحومہ کے شوہرمولانااسلام قاسمی اور صاحبزادے ڈاکٹر طاہرالاسلام قاسمی تعلیمی مشن کو ہندوستان میں ہی نہیں بلکہ بیرون ممالک میں بھی پروان چڑھانے میں نمایاں مقام رکھتے ہیں اس موقع جامعہ کی طالبات اورمعلمات ومدرسہ معارف القرآن کے طلبہ واساتذہ نے گہرے رنج وغم کااظہار کیا۔ نشست کاآغازقرآن پاک کی تلاوت سے ہوا۔شرکت کرنے والوں میں قاری محمدافضل، مولانااحتشام ،قاری عبدالسبحان رحمانی،قاری سعیدالظفر،مولاناریاض الاسلام ،قاری شاہجہاں،مفتی مجیب الرحمن،صوفی شاہ دین ،طفیل احمد وغیرہ کے نام قابل ذکر ہیں۔اس موقع جامعہ کے شیخ الحدیث مولانامحمدیعقوب مظاہری سیتاپوری نے مرحومہ کے لئے دعاء مغفرت کرائی اور پسماندگان کے لئے صبر جمیل کی دعاء کرائی۔