❗عید میں ذرا هم انھیں بھی یاد كرلیں❗

از شمیم ریحان ندوی

هماری عید تو بهت خوشیوں میں گزرے گی.همارے بچےزرق برق لباس زیب تن كریں گے.هماری خواتین قیمتی ملبوسات اور نت نئے زیورات سے آراسته هوں گی.هم شان بان اور آن كے ساتھ عید گاه كی طرف رواں دواں هوں گے. فخرومباهات كا مظاهره كرتے هوئے خراماں خراماں چلیں گے.
همارے دسترخوان متنوع الاقسام. لذیذ اور مرغن غذاوں سے سجے هوں گے.شیر خرما كا دور چلے گا.سویوں كی ڈشیں بنیں گی.خوب مزے لوٹیں گے.دوست احباب كے ساتھ خوش گپیاں كریں گے.ایك دوسرے كو عید مبارك عید مبارك بولیں گے.
ذرا تصور كریں برما كے لاكھوں ان لاچار مسلم مردوں.عورتوں اور بچوں كے بارے میں جو ایسے كیمپ میں زندگی گزارنے پر مجبور هیں جن میں كوئی آسائش كا سامان نهیں.كوئی سهولت نهیں.دنیا كے سب سے زیاده خسته حال اور مفلوك الحال لوگوں میں ان كا شمار هے ان كی عید كیسی هوگی.آج كے دن ان كے دل په كیسی گزرے گی.كهاں سے كھائیں گے اور كهاں سے پهنیں گے.
ذرا سوچیں ان مفلوك الحال فلسطینیوں كے بارے میں جن كی زندگی تیغوں كے سائے میں گزر رهی هے.جو دنیا كے سب سے بڑے جیل خانے میں مقید هیں.ذلت وخواری كی زندگی گزارنے پر مجبور هیں.پوری قوم دوسروں كی مدد اور تعاون پر زندگی گزار رهی هے.دنیا كے سب سے لاچار اور بیكس قوم میں ان كا شمار هے.آج ان كی عید كیسی هوگی.
ایسے موقع پر ذرا هم یاد كریں خانماں برباد عراق و شام كے لاكھوں ان پناه گزینوں بارے میں.جن كا جنگ كی آگ میں سب كچھ خاكستر هوگیا. آج در بدر كی ٹھوكریں كھارهے هیں. غیر ملكوں میں زیر آسمان ننگے فرش پرذلت و خواری كی زندگی گزارنے پر مجبور هیں. ذرا غور كریں ان كی عید كیسی هوگی.
ذرا غور كریں هندوستان كے سیكڑوں ان بے قصور نو جوانوں كے بارے میں جنھیں پابند سلاسل كركے تنگ و تاریك كوٹھری همیشه كے لئے دھكیل دیا گیا هے ان كی عید كیسی هوگی.ان كے اهل خانه پر آج كیا گزرے گی.
كیسی هوگی محمد اخلاق كے كنبے كی عید.آج كیسی عید هوگی ان گریه كناں لاچار خاندانوں كی جن كے عزیزوں كو گئو كشی كے نام پر بے دردی سے كچل دیا گیا.
جب هم عیدگاه كی طرف دوگانه عید الفطر كی نماز ادا كرنے جائیں تو دنیا كے ان لاتعداد مجبور و لاچار مسلمانوں كو ذرا یاد كرلیں.ذرا یاد كرلیں اس سسكتی هوئی انسانیت كے بارے میں جسے ظالم حكمراں اپنے پاوں سے روند رهے هیں.
یا اله العالمین ان مجبور و بےكس انسانوں پر رحم فرما.تو تو ایك ماں سے ستر گنا زیاده اپنے بندوں سے پیار كرتا هے.ذرا اپنے ان خانه خراب بندوں پر محبت كی بارش فرمادے.آج عید هے.همیں كم سے كم اتنا تو صبر دےاورطاقتور كلیجه دے كه هم ملت اسلامیه كی اس غارت گری كو برداشت كر جائیں. هم پررحم فرما یا رب العالمین.