واشنگٹن ڈی سی کی علی گڑھ الیومنائی ایسو ایشن اے ایم یو کے ہونہار طلبا کو مالی مدد مہیا کرارہی ہے

علی گڑھ،19؍جون
امریکہ کے واشنگٹن ڈی سی کی علی گڑھ الیومنائی ایسو ایشن(اے اے اے ) کے زیرِ اہتمام گذشتہ کئی دہائیوں سے علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے ہونہار طلبأ کے لئے اسکالر شپ کے توسط سے مالی مدد مہیا کرائی جا رہی ہے۔1976میں اپنی تشکیل کے بعد سے اے اے اے اپنے اسسٹینس پروگراموں کے توسط سے تقریباً 2500 طلبأ جن میں گذشتہ سال کے264طلبأ شامل ہیں، کو میڈیسن، نرسنگ، کمپیوٹر،فزیکل سائنس، انجینئرنگ، قانون اور لبرل آرٹ جیسے مضامین میں تعلیم حاصل کرنے کے لئے مالی مدد مہیا کرائی جا چکی ہے۔ اس پروگرام میں انتخاب کے لئے طریقۂ عمل کافی چیلنجنگ ہے اور طالب علم کی مالی ضروریات کے جائزے اور اس کے ذریعہ حاصل کی گئی میرٹ پر منحصر ہے۔اس کے علاوہ اے اے اے علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے طلبأ کو حکومتِ ہند کے ذریعہ مختلف میدانوں میں دی جانے والی اسکالر شپ سے متعلق معلومات مہیا کرانے میں بھی سرگرم ہے۔یہ ایسو سی ایشن کالج سطح تک نہ پہونچنے والے طلبأ کی رہائش گاہوں تک تعلیمی سہولیات پہونچانے کی بھی کوشش کر رہی ہے۔2008میں اس اسسٹینس پروگرام کے شروع ہونے کے بعد تقریباً پانچ ہزار طلبأ اس کی سہولیات سے مستفیض ہوچکے ہیں۔علی گڑھ الیومنائی ایسو سی ایشن نورتھ امریکہ کی سب سے قدیم الیومنائی ایسو سی ایشن ہے جو اپنے اسسٹینس پروگرام کے توسط سے ہر سال تقریباً30لاکھ روپیہ کی مالی مدد مہیا کرا رہی ہے۔یہ ایسو سی ایشن علی گڑھ کی مسلم سوشل اپلفٹ سوسائٹی جو کہ اے ایم یو کے