بدھ گیا بم دھماکہ معاملہ سرکاری گواہوں کے بیانات کا اندراج مکمل ملزمین کے بیانات درج کرنے کا عمل جلد شروع ہونے کے امکانات، گلزار اعظمی

ممبئی۱۶؍ جون
بہارکی راجدھانی پٹنہ اور بدھشٹوں کے مذہبی مقام بدھ گیا میں ہونے والے بم دھماکہ معاملوں کی جاری سماعت کے دوران آج بدھ گیا مقدمہ میں سرکاری گواہوں کے بیانات کا اندراج مکمل ہوگیا نیز عدالت نے ملزمین کے بیانات کے انداراج کے لیئے ۳؍جولائی کی تاریخ مقرر کی ہے ، یہ اطلاع آج یہاں ممبئی میں ملزمین کو قانونی امداد فراہم کرنے والی تنظیم جمعیۃ علماء مہاراشٹر (ارشدمد نی) قانونی امداد کمیٹی کے سربراہ گلزار اعظمی نے دیتے ہوئے بتایا کہ ۲۳؍ اکتوبر ۲۰۱۳ء کو پٹنہ کے مشہور تاریخی گاندھی میدان میں بم دھماکہ ہوا تھا جب وزیر اعظم ہند نریندر مودی ایک عوامی ریلی سے خطاب کرنے والے تھے ،اس بم دھماکہ میں ۶؍لوگ ہلاک اور ۹۰؍ افراد زخمی ہوئے تھے ، اسی طرح ۷؍ جولائی ۲۰۱۳ ء کو بدھ گیا میں واقع بدھشٹوں کے مندر میں بم دھماکے ہوئے تھے جس میں چند افراد زخمی ہوئے تھے ۔ بم دھماکوں کی تفتیش قومی تفتیشی ایجنسی NIA کے سپرد کی گئی جس نے بہار، جھاکھنڈ اور آس پاس کی دیگر ریاستوں سے ۱۰؍ اعلی تعلیم یافتہ مسلم نوجوانوں کو گرفتار کیا تھا اور ان کے خلاف تعزیرات ہند کی دفعات 307,326,212,121(A), 120(B), 34 ، دھماکہ خیز مادہ کے قانون کی دفعات 3, 5 اور غیر قانونی سرگرمیوں کی روک تھام والے قانون کی دفعات 16,18,20 کے تحت مقدمہ قائم کیا تھا جس کے بعد ملزمین کی پیروی کے لئے صدر جمعیۃ علماء ہندو مولانا سید ارشد مدنی کی ہدایت پر جمعیۃ علماء کی جانب سے ایڈوکیٹ سید عمران غنی، ایڈوکیٹ رنجن کمار، ایڈوکیٹ واصف الرحمن خان، ایڈوکیٹ شریہ پرکاش سنگھ، ایڈوکیٹ مہیش کمار ودیگر کو مقرر کیا گیا ہے۔
گلزار اعظمی نے بتایا کہ اس معاملے میں استغاثہ نے ۹۰؍ سرکاری گواہوں کو NIA کی خصوصی عدالت کے جج منوج کمار سنہا کے روبرو گواہی کے لیئے پیش کیا جس میں بیشتر پولس اہلکار اور زخمی شامل تھے ۔
گلزار اعظمی نے کہا کہ جمعیۃ علماء ملزمین۱۔ عمیر صدیقی شفیع صدیقی۲۔ اظہر الدین قریشی شکیل الدین قریشی۳۔ امتیاز انصاری کمال الدین انصاری۴۔ حیدر علی عالم انصاری کو قانونی امداد فراہم کررہی ہے اسی طرح پٹنہ بم دھماکہ میں ماخوذ ملزمین کو بھی قانونی امداد فراہم کررہی ہے جس میں پٹنہ بم دھماکہ معاملے میں سرکاری گواہوں کے بیانات کا اندراج جاری ہے اور امید ہیکہ جلد ہی اس معاملے میں بھی سرکاری گواہوں کی گواہیاں مکمل کرلی جائیں گی۔
واضح رہے کہ متذکرہ بم دھماکوں کی تیز سماعت کے لئے مرکزی حکومت نے خصوصی نوٹیفیکیشن جاری کرکے پٹنہ سیشن عدالت میں خصوصی عدالت کا قیام عمل لایا تھا ، معاملے کی سماعت تقریباً روز بہ روز جاری ہے