اتراکھنڈ میں وزیر اعلی کا دفتر بنا شراب خانہ!

سیکریٹریٹ کے دفترکے ٹوائلٹ میں شراب کی بوتلیں اورمشکوک چیزیں ملیں
ہریدوار، 27 مئی:پورے ملک میں وزیر اعظم نریندر مودی یہ پیغام دے رہے ہیں کہ صفائی ہی سب سے بڑی دولت ہے اور یہی دولت اگر جمع کر لیا تو پوری زندگی نہ صرف صحت مند جسم کے ساتھ گزارے گا بلکہ ملک بھی نئی بلندیوں کو چھو پائے گا، اگرچہ اس کا اثر نہ تو اتراکھنڈ حکومت پر پڑ رہا ہے اور نہ ہی اتراکھنڈ کی افسر شاہی پر۔سب سے محفوظ سمجھے جانے والے سیکریٹریٹ میں واقع خود وزیر اعلی تروندر سنگھ راوت کے دفتر میں باتھ روم کے اندر نہ صرف شراب کی بوتلوں کا انبار لگا ہے بلکہ کئی مشکوک چیزیں بھی کھلے عام دیکھنے کو ملی ہیں۔آخر اتنی محفوظ جگہ پر یہ شراب کی بوتلیں پہنچی کس طرح رہی ہیں؟ یہ سوال سیکورٹی کے طریقہ کار پر انگلی اٹھانے کے لئے کافی ہے۔ آخر یہ شراب کی بوتلیں سیکرٹریٹ میں پہنچ کس طرح گئیں اور وہ بھی ٹھیک وزیر اعلی کے دفتر میں واقع باتھ روم میں اور کس طرح کسی کی اس پرنگاہ نہیں پڑی، جبکہ سیکورٹی کے بڑے بڑے دعوے کئے جاتے ہیں۔بتا دیں کہ یہ پہلا موقع نہیں ہے جب اس طرح کی چیزیں سیکرٹریٹ میں ملی ہیں، مگر تروندر حکومت میں یہ مانا جا رہا تھا کہ اس طرح کی غلط چیزیں اور شراب کی بوتلیں کم سے کم ان کے دفتر یا ہاؤسنگ کے ارد گرد نظر نہیں آئیں گی، مگر ایسا نہ ہوا، تو اشارہ صاف ہے کہ افسر شاہی میں نہ وزیر اعلی کا ڈر ہے اور نہ ہی کام کے تئیں ایمانداری۔