’’ مجرم بے خوف،عوام خوف زدہ،کمزورطبقات حملہ آوروں کے شکار‘‘

سماجوادی پارٹی میمورنڈم سونپ کر گورنر سے کرے گی مداخلت کی اپیل
لکھنؤ27مئی:ریاستی حکومت میں بگڑتی قانون اور عوام مخالف پالیسیوں کے خلاف 29مئی کو تمام اضلاع میں سماج وادی پارٹی (ایس پی) ضلع مجسٹریٹ کے ذریعے گورنر کومیمورنڈ سونپ کر ان سے مداخلت کی اپیل کرے گی۔پارٹی کے مرکزی ترجمان راجندرچودھری نے کہا کہ سہارنپور میں مسلسل تین سنگین واقعات ہوئے۔متھرامیں ڈکیتی اور صرافہ قتل، گریٹر نوئیڈا زیور علاقے میں چار خواتین کے ساتھ رات میں اجتماعی عصمت دری اور قتل، وارانسی میں 10کروڑ روپے کی ڈکیتی، گورکھپور میں ہلاکتیں، الہ آباد میں اجتماعی عصمت دری اور قتل وغیرہ دل دہلانے والے اسکینڈل ہوئے ہیں۔راجدھانی لکھنؤ بھی جرائم سے دہشت زدہ ہے۔چودھری نے کہا کہ گورنر کو میمورنڈم کے ذریعے پارٹی سنجیدگی سے یہ بات علم میں لانا چاہتی ہے کہ بی جے پی حکومت مکمل طور پر ناکام ہے اور اپنی اکثریت کے سہارے معاشرے کے ہرطبقے کو دہشت زدہ کرناچاہتی ہے۔مجرم بے خوف ہیں۔کمزور طبقے حملہ آوروں کے شکارہیں۔ریاست کو افراتفری سے بچانے کے لئے راج بھون کو فوری طور مؤثر اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔چودھری نے کہا کہ تین سال میں مرکز کی بی جے پی حکومت کی ناکامی کی چوٹی پر ہے تو اتر پردیش میں یوگی آدتیہ ناتھ حکومت نے اپنے دورِاقتدارکے 70ویں دن میں ہی قانون کی سنگین صورت حال پیدا کر دی ہے۔