سپریم کورٹ کے وکیل مشتاق احمد علیگ کی وفات پر آئی او ایس کا اظہار تعزیت

سپریم کورٹ کے وکیل مشتاق احمد علیگ کی وفات پر آئی او ایس کا اظہار تعزیت
نئی دہلی
سپریم کورٹ کے وکیل مشتاق احمد علیگ ایک بہترین ین ایڈوکیٹ، ملت کے ہمدرد اور مسلمانوں کے بہی خواہ تھے، ان کے انتقال سے مجھے ذاتی طور پر صدمہ پہنچا ہے اور مجموعی طور آئی او ایس اور مسلمانوں کا ایک اور بڑا خسارہ ہے ۔سپریم کورٹ کے وکیل  ایڈوکیٹ مشتاق احمد علیگ کی وفات پر ان خیالات کا اظہار آل انڈیا ملی کونسل کے جنرل سیکریٹری اور آئی او ایس کے چیئرمین مین ڈاکٹر محمد منظور عالم نے کیا۔ اپنے تعزیتی بیان میں ڈاکٹر محمد منظور عالم نے مزید کہا ایڈوکیٹ مشتاق احمد علیگ انسٹیٹیوٹ آف آبجیکٹیو اسٹڈیز کی جنرل اسمبلی کے ممبر تھے اور اور شعبہ قانون کے سرگرم رکن تھے مسلمانوں کے مسائل پر گہری نظر رکھتے تھے  مسلمانوں کے ہمدرد تھے ۔ کورٹ کے اندر اور باہر ہر جگہ مسلمانوں کے ایشوز کو ترجیح دیتے  تھے۔ آئی او ایس کے لیے ہمیشہ پیش پیش رہتے تھے۔ میں نے ان کو بہت قریب سے دیکھا ہے، وہ وکیل ہونے کے ساتھ ساتھ اپنے دل میں جذبہ ہمدردی اور خیر خواہی رکھتے تھے ۔آئی او ایس کے سبھی ممبر اور اسٹاف غمزدہ اور رنجیدہ ہیں ہے مشکل کی اس گھڑی  میں ہم سب ایڈوکیٹ مشتاق احمد کے اہل خانہ کے ساتھ ہیں اور دعا گو ہیں کہ اللہ تعالی مرحوم کی مغفرت فرمائے اور جنت الفردوس میں اعلی مقام نصیب کرے کرے۔