پروفیسر عبدالرحمن مومن صاحب طویل علالت کےبعدبنگلور میں رحلت فرماگئے ہیں ۔۔۔پروفیسر عبدالرحمن مومن صاحب کا دنیا سے رخصت ہوجانا ملی تعلیمی اور سماجی اداروں کا نا قابل تلافی نقصان:ڈاکٹر محمد منظور عالم

*انتقال پُرملال*
انتہائی رنج و غم کےساتھ یہ خبردی جارہی ہےکہ۔۔
ممبئی یونیورسٹی کے شعبہء عمرانیات / سوشیالوجی کے سابق پروفیسر ‘ ٹائمز آف انڈیا ممبئی میں انگریزی میں حالات حاضرہ پر عرصہء دراز سے اپنے جذب دروں کو سپرد قلم کرنے والے اہل قلم ‘ اردو و انگریزی زبانوں میں درجنوں کتابوں کے مصنف ‘ پروفیسر عبدالرحمن مومن صاحب طویل علالت کےبعدبنگلور میں رحلت فرماگئے ہیں ۔۔۔

انسٹی ٹیوٹ آف آبجیکٹیواسٹیڈیز نیو دہلی کے جنرل سکریٹری ڈاکٹر محمد منظور عالم صاحب نے اپنے گہرے رنج کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پروفیسر اے آر مومن کی رحلت ملت کا عظیم خسارہ ہے عبدالرحمن صاحب اردو, فارسی, انگرہزی, عربی اور دیگر کئ زبانوں کے استاد تھے قران و حدیث پر گہرا عبور تھا, آئ او ایس نے مومن صاحب کی بہت سی کتابوں کی اشاعت کی جس میں سوشولوجی پر مومن صاحب پہلے مصنف تھے جنہوں نے انگریزی میں سوشولوجی پر کتاب لکھی تھی بہرحال پروفیسر عبدالرحمن مومن صاحب کا دنیا سے رخصت ہوجانا ملی تعلیمی اور سماجی اداروں کا نا قابل تلافی نقصان ہے اللہ مرحوم کے درجات بلند کرے جنت الفردوس میں اعلی مقام عطا کریں… آمین
ان کاجسد خاکی بھیونڈی لایاجارہاہے۔۔ تدفین کل بروز منگل 24۔ نومبرکوٹرگیٹ قبرستان میں ہوگی۔۔۔( وقت کااعلان بعدمیں کیاجائے گا )۔۔۔
رہائش:نزداپسراہوٹل، اسلامپورہ، بھیونڈی۔