علم ہماری طاقت اور کامیابی کا ضامن! ڈاکٹر عبد المالک مغیثی

علم ہماری طاقت اور کامیابی کا ضامن! ڈاکٹر عبد المالک مغیثی
سہارنپور(احمد رضا) گزشتہ روز علاقہ کی معروف و مشہور دینی درسگاہ جامعہ رحمت گھگرولی میں تعلیمی اہمیت پر خاص گفتگو کرتے ہوئے ناظم اعلیٰ ڈاکٹر عبد المالک مغیثی نے فرمایاکہ سبھی اساتذہ طلباء کے ساتھ بچوں کی سی شفقت کا معاملہ کریں اور بچوں کو بھی کہا کہ وہ بھی اساتذہ کو اپنے والدین کی طرح سمجھیں آپنے کہاکہ یہ بڑی خوش نصیبی کی بات ہے کہ اللہ تعالی نے آپ کو اپنے کلام عظیم کے سیکھنے سکھانے کیلئے قبول فرمایا اور کہا کہ مدارس اسلامہ اسلام کے مضبو ط قلعے ہیں،جن کی بقاء اور تحفظ کیلئے اللہ نے آپ کو مدارس اسلامیہ سے جو ڑ پیدا فرمادیا ہے، اللہ تعالی جس انسان سے محبت فرماتے ہیں تو اس کو اپنے دین کی سمجھ عطا فرماتے ہیں تو اس لئے اللہ تعالی نے تمام انسانوں میں سے چن کر آپ حضرات کا انتخاب فرمایا ہے، اس پر اللہ کا شکر ادا کرنا چاہئے،تمام اعمال کا دارو مدار نیتوں پر ہے اسلئے ضروری ہے کہ ہم اپنی نیتوں کو درست رکھیں اور علم دین صرف اور صرف اللہ کی رضا کیلئے حاصل کریں اللہ کے نبیؐ کا ارشاد ہے کہ علم دین کاحاصل کرنا ہرمسلمان عاقل بالغ مرد عورت پر فرض ہے انہوں نے وقت کی قدرو قیمت اور اپنے اساتذہ اور آلات علم کا ادب احترام کو ضروری قرار دیتے ہوئے مزید کہا کہ علم بغیر عمل کے بے سود ہے!مولانا ڈاکٹر عبد المالک مغیثی نے طلبہ کو تلقین کی کہ اپنے اکابر کے نقشِ قدم پر چلتے ہوئے امور لا یعنی سے بچتے ہوئے اعلیٰ تعلیم کے حصول میں مصروف ہوکر اپنے مستقبل کو تابناک بنانا چاہئے انہوں نے مزید کہا، جو طالب علم زمانہ طالب علمی میں گناہوں سے پرہیز کرتے ہیں ان کا علم انکو نفع پہونچاتا ہے، اس کے بر خلاف گناہوں سے نہ بچنے والے اور دیگر امور ِدنیوی میں مشغول رہ کر علم حاصل کرنے و الے طالب علم کو انکا علم فائدہ نہیں پہونچاتا، امام شافعی ؒ کا واقعہ بیان کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے اپنے حافظہ کی کمزوری کی شکایت اپنے استاذ امام وکیع ؒ سے کی تو انہوں نے گناہوں سے بچنے کی تلقین کی اور کہا کہ علم اللہ کا نور ہے اور اللہ کا نور گنہگار کو نہیں دیا جاسکتا انہوں نے طلبہ کو اسوہ رسول اور اسلامی شعائر کو اپنا نے پر زور دیا!