امریکی صدارتی امیدوار جوبأیڈن ” سی اے اے اور این آرسی” کے مخالفت ؛ کشمیر اور آسام میں حقوق انسانی کی بحالی کا مطالبہ۔

 اقوام متحدہ کے ماہرین نے بھارت سے  احتجاج کرنے والے رہنماؤں کو رہا کرنے کی اپیل کی ہے

 اقوام متحدہ کے ماہرین نے بھارت سے  احتجاج کرنے والے رہنماؤں کو رہا کرنے کی اپیل کی ہے

ہندوستان ،چین تنازع: کیا امریکہ نئی سیاسی صف بندی کررہا ہے ؟

 

ايران کے فوجی علاقے ميں دھماکہ، کوئی جانی نقصان نہيں

 

جماعت اسلامی کے سابق امير سيد منور حسن انتقال کر گئے

 

کورونا کی وبا اور بحيرہ جنوبی چين معاملے پرآسيان کی میٹنگ

 

اسامہ بن لادن’شہید‘ہے، عمران خان کے بیان پر شدید تنقید

 

کرونا کے کیس آئندہ ہفتے ایک کروڑ سے زیادہ ہو جاءیں گے ، عالمی ادارۂ صحت کا انتباہ:

 

 قبلۂ اول  مسجد اقصیٰ کو اسراءیلی معبد میں تبدیل کرنے کا منصوبہ تیار :

مسجد اقصیٰ کے امام و خطیب شیخ عکرمہ صبری نے مسلم دنیا کع متنبہ کیا ۔

 

امریکی صدارتی امیدوار جوبأیڈن ” سی اے اے اور این آرسی” کے مخالفت ؛ کشمیر اور آسام میں حقوق انسانی کی بحالی کا مطالبہ۔

 

آمنا سامنا میڈیاعالمی خبریں :
 نامہ نگار  : محمد سمیع اللہ شیخ

27/06/2020

خبریں تفصیل سے

 اقوام متحدہ کے ماہرین نے بھارت سے  احتجاج کرنے والے رہنماؤں کو رہا کرنے کی اپیل کی ہے

جینیوا (26 جون 2020) – اقوام متحدہ کے ماہرین نے آج ہندوستان سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ انسانی حقوق کے محافظوں کو فوری طور پر رہا کریں جو ملک کے شہریت کے قوانین میں تبدیلیوں کے خلاف احتجاج کرنے پر گرفتار ہوئے ہیں۔
“ان محافظوں ، جن میں سے بہت سے طلباء ، کو صرف اس وجہ سے گرفتار کیا گیا ہے کہ انہوں نے سی اے اے (شہریت ترمیمی ایکٹ) کے خلاف مذمت اور احتجاج کرنے کے اپنے حق کا استعمال کیا ، اور ان کی گرفتاری واضح طور پر ہندوستان کے متحرک سول سوسائٹی کو ایک پُرسکون پیغام بھیجنے کے لئے تیار کی گئی ہے کہ حکومتی پالیسیوں پر تنقید برداشت نہیں کی جائے گی ، “ماہرین نے بتایا۔
ایک انتہائی تشویشناک واقعہ دہلی کی حاملہ طالبہ صفورا زرگر کا ہے جس کو دو ماہ سے زائد عرصے کے دوران حراست میں لیا گیا تھا جس کی وجہ سے وہ تنہائی کی قید کے مترادف ہے ، اس نے اپنے اہل خانہ اور قانونی نمائندے سے باقاعدہ رابطے سے انکار کیا ، اور انہیں مناسب طبی امداد فراہم نہیں کی گئی تھی یا غذا. بالآخر انھیں حمل کے چھٹے مہینے میں انسانی بنیادوں پر 23 جون 2020 کو ضمانت مل گئی۔
سی اے اے متعدد پڑوسی ممالک کے مخصوص مذہبی اقلیتوں سے تعلق رکھنے والے افراد کے لئے شہریت تک تیز اور آسان تر رسائی فراہم کرتا ہے لیکن اس میں مسلمانوں کو خارج نہیں کیا گیا۔ دسمبر 2019 میں اس کے اختیار کیے جانے سے ہندوستانیوں نے متنوع عقائد کے ہندؤں سمیت ملک بھر میں احتجاج کو بھڑکایا – جن میں ہندو بھی شامل ہیں – جن کا خیال ہے کہ اس سے ہندوستان کے آئین کی سیکولر بنیادوں کی خلاف ورزی ہوتی ہے۔
11 میں سے بہت سے انفرادی معاملات میں * انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے سنگین الزامات ، متعدد گرفتاری اور نظربندی کے دوران عمل میں ناکامی کے ساتھ ساتھ تشدد اور ناجائز سلوک کے الزامات شامل ہیں۔
انہوں نے کہا ، “حکام کو چاہئے کہ وہ انسانی حقوق کے تمام محافظوں کو فوری طور پر رہا کریں جنہیں فی الحال بغیر کسی ثبوت کے مقدمے کی سماعت سے پہلے نظربند کیا جا رہا ہے ، اکثر تقاریر کی بنیاد پر ہی انہوں نے سی اے اے کی امتیازی نوعیت کی تنقید کی۔”
ماہرین نے ان کی تشویش پر بھی روشنی ڈالی کہ مظاہروں کے بارے میں حکام کا ردعمل امتیازی لگتا ہے۔ ایسا لگتا ہے کہ انہوں نے سی اے اے کے حامیوں کے ذریعہ کی جانے والی نفرت اور تشدد پر اکسانے کے الزامات کی بھی اسی طرح تفتیش نہیں کی ہے ، جن میں سے کچھ کے بارے میں بتایا جاتا ہے کہ انہوں نے جوابی جلسوں میں “غداروں کو گولی مار” کا نعرہ لگایا۔
ماہرین نے اپنی تشویش کو مزید واضح کیا کہ حکام انسداد دہشت گردی یا قومی سلامتی کی قانون سازی کی کوشش کررہے ہیں ، اور پولیس کے ضابطہ کارانہ اختیارات کا استعمال کرتے ہوئے مظاہرین کی ضمانت سے انکار کرتے ہیں اور بھاری سزائیں سنانے والے الزامات جاری کرتے ہیں۔
“اگرچہ کوویڈ 19 وبائی بیماری کی وجہ سے مارچ میں مظاہرے ختم ہوگئے تھے ، اور ہندوستان کی سپریم کورٹ نے وبائی امراض سے متعلق صحت کے خدشات کے سبب جیلوں کو سجانے کا ایک حالیہ حکم جاری کیا تھا ، تاہم مظاہرین رہنماؤں کو نظربند رکھا گیا ہے۔ ہندوستانی جیلوں میں وائرس کے پھیلنے کی اطلاع سے ان کی فوری رہائی مزید ضروری ہوگئی ہے ،

ہندوستان ،چین تنازع: کیا امریکہ نئی سیاسی صف بندی کررہا ہے ؟

ہندوستان اور چین کے درمیان لداخ کے معاملے پر کشیدگی اور جھڑپوں کے بعد جنوبی ایشیا میں نئی سیاسی صف بندی کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے۔

بعض تجزیہ کاروں کا خیال ہے کہ امریکہ چین کے ساتھ تنازع پر ہندوستان کی بھرپور حمایت کر رہا ہے جب کہ پاکستان اور چین اس معاملے میں ایک اکھٹے ہیں۔

امریکہ نے وادی میں کشیدگی کا ذمہ دار چین کو ٹھیراتے ہوئے کہا ہے کہ ہندوستان سمیت ملائیشیا، انڈونیشیا اور فلپائن جیسے ملکوں کو چین سے خطرہ ہے۔

امریکی ترجمان نے چند روز قبل ایک بیان میں کہا تھا کہ ان خطرات کے پیشِ نظر امریکہ اپنی افواج کی عالمی تعیناتی کا جائزہ لے رہا ہے۔ وہ یورپ میں اپنی فوج کم کر کے انہیں دوسرے مقامات پر تعینات کرے گا تاکہ درپیش چیلنجز کا مقابلہ کیا جا سکے۔

ہندوستان کے سابق وزیر اعظم ڈاکٹر من موہن سنگھ کے دور میں ہندوستان اور امریکہ کے درمیان ہونے والے جوہری تعاون کے معاہدے کے ساتھ اسٹرٹیجک اور وسیع تر تعلقات کے قیام کی جو بنیاد رکھی گئی تھی وہ نریندر مودی کے دور میں کافی مضبوط ہوئی ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 

ايران کے فوجی علاقے ميں دھماکہ، کوئی جانی نقصان نہيں

تہران کے قريب ايک حساس علاقے ميں گيس کے ايک ذخيرے ميں بڑا دھماکہ ہوا۔ يہ دھماکہ پارچين کے علاقے ميں ہوا، جس کے بارے ميں مغربی قوتوں کا ماننا ہے کہ ايران نے ایک دہائی قبل اپنے جوہری تجربات يہيں کيے تھے۔ وزارت دفاع کے مطابق آگ پر قابو پا ليا گيا ہے اور يہ کہ آگ فوجی علاقے ميں نہيں لگی تھی۔ ان کے بقول چونکہ يہ دھماکہ ايک پہاڑی اور غير رہائشی علاقے ميں ہوا، اس ميں کسی جانی نقصان کی اطلاع نہيں۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

جماعت اسلامی کے سابق امير سيد منور حسن انتقال کر گئے

پاکستان کے مذہبی سياسی پارٹی جماعت اسلامی کے سابق امير سيد منور حسن کا 78 برس کی عمر ميں انتقال ہوگیا۔ وہ پچھلے دو ہفتوں سے ايک ہسپتال ميں زير علاج تھے اورکل بروز جمعہ ان کا انتقال ہوا۔ فوری طور پر ان کی آخری رسومات کے حوالے سے تفصيلات سامنے نہيں آئی ہيں۔ سيد منور حسن نے اپنے سياسی کيريئر کا آغاز نيشنل اسٹوڈنٹس فيڈريشن سے کيا تھا اور سن 1959 ميں وہ اس تنظيم کے صدر منتخب ہو گئے تھے۔ جماعت اسلامی ميں وہ سن 1960 ميں شامل ہوئے اور سن 1963 ميں صدارتی سنبھالی۔

 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 

کورونا کی وبا اور بحيرہ جنوبی چين معاملے پرآسيان کی میٹنگ

 

گذشتہ روز آسيان کے رکن ممالک کی ايک میٹنگ ہوءی۔ اس آن لائن سربراہی اجلاس ميں آسيان کی قيادت کے حامل ملک ويت نام نے تنبيہ کی ہے کہ کورونا وائرس کی عالمی وبا نے کئی دہائيوں کی اقتصادی ترقی کی نفی کر دی ہے۔ دس رکنی بلاک کے اس اجلاس ميں کورونا کی وبا کے اقتصادی نتائج کا جائزہ ليا جا رہا ہے جبکہ بحيرہ جنوبی چين ميں بيجنگ کی حاليہ سرگرمياں بھی موضوع بحث ہیں۔ وبا کے باعث تھائی لينڈ اور ويت نام ميں سياحت کو شديد نقصان پہنچا ہے۔

 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

اسامہ بن لادن’شہید‘ہے، عمران خان کے بیان پر شدید تنقید

 

عمران خٓن نے گزشتہ روز قومی اسمبلی میں اپنے خطاب کے دوران کہا کہ امریکا نے ایبٹ آباد میں حملہ کر کے  تنظیم القاعدہ کے رہنما اسامہ بن لادن کو ’شہید کیا‘۔ اس بیان پر انہیں شدید تنقید کا سامنا ہے۔

عمران خان ملکی پارلیمان میں بجٹ کے حوالے سے تقریر کر رہے تھے، جس میں انہوں نے سابق حکمرانوں کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ان کے ادوار میں پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف امریکا کی جنگ میں واشنگٹن کے ساتھ شراکت داری کر کے غلطی کی تھی۔

 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

کرونا کے کیس آئندہ ہفتے ایک کروڑ سے زیادہ ہو جاءیں گے ، عالمی ادارۂ صحت کا انتباہ:

 

عالمی ادارۂ صحت (ڈبلیو ایچ او) نے کہا ہے کہ دنیا بھر میں کرونا وائرس کا پھیلاؤ تیزی سے جاری ہے اور آئندہ ہفتے دنیا بھر میں کیسز کی تعداد 93 لاکھ سے بڑھ کر ایک کروڑ تک پہنچ جائے گی۔

عالمی ادارۂ صحت کے سربراہ ٹیڈروس ایڈہینم نے بدھ کو ایک بیان میں کہا کہ لاطینی امریکہ کے ملک وائرس کا نیا مرکز بن چکے ہیں جہاں اب تک ایک لاکھ سے زائد اموات ہو چکی ہیں۔ ان میں سے 54 ہزار سے زائد اموات خطے کے صرف ایک ملک برازیل میں ہوئی ہیں۔

عالمی ادارۂ صحت کے سربراہ ٹیڈروس ایڈہینم نے کہا ہے کہ آئندہ ہفتے کیسز ایک کروڑ تک پہنچنے کا تخمینہ ہمارے لیے یاد دہانی ہے کہ ویکسین کی تیاری کے ساتھ ساتھ ہمیں وائرس کا پھیلاؤ روکنے اور زندگیاں بچانے کی ذمہ داری بھی نبھانا ہو گی۔

 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 

 قبلۂ اول  مسجد اقصیٰ کو اسراءیلی معبد میں تبدیل کرنے کا منصوبہ تیار :

مسجد اقصیٰ کے امام و خطیب شیخ عکرمہ صبری نے مسلم دنیا کع متنبہ کیا ۔

مسجد اقصیٰ کے امام و خطیب الشیخ عکرمہ صبری نے مسلم دنیا کو متنبہ کیا ہے کہ اسراءیل مسلمانوں کے قبلہ اول کو معبد میں تبدیل کرنے جارہا ہے ، انہوں نے کہا کہ القدس اوقاف نے مسجد اقصیٰ کے انتظامی امور کو اپنے ہاتھ میں لینا شروع کردیا ہے ، جو سرکاری سطح پر قبلہ اول کو قبضہ کرنے کی خطر ناک گھنٹی ہے ۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

امریکی صدارتی امیدوار جوبأیڈن ” سی اے اے اور این آرسی” کے مخالفت ؛ کشمیر اور آسام میں حقوق انسانی کی بحالی کا مطالبہ۔

امریکی ڈیموکریٹک پارٹی کی جانب سے امریکہ کے صدارتی امیدوار اور ملک کے سابق ناءب صدر جو باءیڈن نے ہندوستان میں سی اے اے اور این آرسی کی مخالفت کی اور کہا کہ یہ ملک کی طویل سیکولر ازم اور جمہوری روایات کے خلاف ہے ، اسی کے ساتھ انہوں نے کشمیر میں عوام کے بنیادی حقوق کی بحالی کا بھی مطالبہ کیا ۔ انہوں نے امریکی مسلمانوں کے لءے پالیسی پیپر بھی جاری کیا ، ساتھ ہی انہوں نے آسام اور چین کے ایغور مسلمانوں پر مظالم کا بھی ذکر کیا ہے ، اختلاف راءے کے اظہار پر پابندی لگانے پربھی انہوں نے شیدید تنقید کی ۔