ہندوستان میں کورونا وائرس کے معاملات 4 لاکھ سے تجاوز کرگئے—تیل کی قیمتوں میں مسلسل 14 ویں دن اضافہ

چین کے سامانوں کے بائیکاٹ سے اس کی معیشت پر کوئی فرق نہیں پڑے گا:پی چدمبرم

آج کی اہم خبریں
آمنا سامنا میڈیا اردو
بشکریہ ABD News
21/06/202
*ہندوستان میں کورونا وائرس کے معاملات 4 لاکھ سے تجاوز کرگئے*
تیل کی قیمتوں میں مسلسل 14 ویں دن اضافہ
دہلی پولیس کی چارج شیٹ یکطرفہ ، جمعیة علماء ہند قانونی طریقہ اختیار کرےگی ۔۔۔
ایودھیا کیس: اڈوانی ، جوشی ، کلیان سنگھ سمیت 5 ملزمان کے بیانات ریکارڈ کرنے کے لئے تاریخ مقرر
خبریں تفصیل سے ۔۔۔۔۔۔۔۔
واضح ہوکہ ہندوستان میں کورونا وائرس کے انفیکشن کے معاملات کم  ہونے  کا نام نہیں لے رہے ہیں۔ ہفتے کے روز ، ملک میں کورونا کیسز  4 لاکھ کو عبور کرچکے ہیں ، ملک میں کورونا کے  کیسز روز آنہ تیزی سے بڑھ رہے ہیں، جس کے بعد متاثرہ افراد کی تعداد 4،00،412 ہوگئی ہے۔ ، ملک میں اس مہلک وائرس کی وجہ سے اب تک 13000 سے زیادہ افراد اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔ کورونا انفیکشن کے معاملے میں ہندوستان دنیا میں چوتھے نمبر پر ہے اور اس میں صرف امریکہ ، برازیل اور روس سے پیچھے ہے۔
_________________________
*دہاٸ کا پہلا مکمل سورج گرہن آج*
واضح ہوکہ دہاٸ کا پہلا مکمل سورج گرہن آج اتوار کو ہوگا ، اور یہ رنگ آف فاٸر کی طرح نظر آۓ گا ،پی ایس آٸ ڈاٸرکٹر کے بیان کے مطابق مکمل سورج گرہن شمال ہندوستان کے کچھ جگہوں میں دیکھا جاۓ گا ، جبکہ یہ جزوی طور پر ملک کے دیگر حصوں میں دیکھا جاۓ گا صبح 9 بجکر 56 منٹ سے شام 12 بجکر 49 تک ہندوستان میں مختلف مقامات پر مختلف وقتوں میں دیکھا جاۓ گا.
_________________________
*تیل کی قیمتوں میں مسلسل 14 ویں دن اضافہ*
واضح ہو کہ پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافے کا رجحان ہفتے کے روز مسلسل 14 ویں روز بھی جاری رہا ملک کے دارالحکومت میں پٹرول 51 پیسے اور ڈیزل 61 پیسے مہنگا ہوگیا ہے۔ اس اضافے کے ساتھ ہی دہلی میں پٹرول کی قیمت بڑھ کر 78.88 روپے ہوگئی ہے ، جبکہ ڈیزل کی قیمت 77.67 روپے فی لیٹر ہے۔ دہلی میں پٹرول مسلسل 14 دنوں میں 7.62 روپے فی لیٹر مہنگا ہوگیا ہے اور ڈیزل کی قیمت میں فی لیٹر 8 روپے سے زیادہ کا اضافہ ہوا ہے۔
_________________________
*رہائشی علاقے میں کیمیکل فیکٹری میں دھماکہ ، 1 مزدور ہلاک ، 3 زخمی*
واضح ہو کہ اترپردیش کے لکھنؤ میں یہ دھماکہ واقع بی بی ڈی کے قریب کیمیائی فیکٹری میں جمعہ کی رات گئے ہوا اس دھماکہ میں ایک شخص ہلاک ہوگیا ، جبکہ 3 افراد بری طرح زخمی ہوئے۔ بتایا جارہا ہے کہ یہ دھماکہ اس وقت ہوا جب فیکٹری کے اندر بوائلر میں کیمیکل ملا ہوا تھا۔ لوگوں نے واقعے کے فورا بعد پولیس کو اطلاع دی ، جس کے بعد 8 ایمبولینسیں موقع پر بھیج دی گئیں۔
_________________________
*چین کے سامانوں کے بائیکاٹ سے اس کی معیشت پر کوئی فرق نہیں پڑے گا:پی چدمبرم*
واضح ہو کہ سابق وزیر خزانہ اور کانگریس کے سینئر رہنما پی چدمبرم نے کہا ہے کہ ہمیں جلد از جلد خود کفیل ہونا پڑے گا لیکن ہم باقی دنیا کے ساتھ بھی تعلقات ختم نہیں کرسکتے ہیں۔  بھارت کو چین کا بائیکاٹ کرنے کی ضرورت نہیں ، اسے عالمی سطح پر سپلائی کا حصہ بننا پڑے گا۔انہوں نے کہا کہ چین کے ساتھ بھارت کے تجارتی تعلقات جو بھی ہیں ، وہ چین کی عالمی تجارت کا ایک حصہ ہے۔  پی چدمبرم نے مزید کہا کہ لہذا چینی سامان کے بائیکاٹ سے انہیں کوئی نقصان نہیں ہوگا۔  جب بات سیکیورٹی جیسے اہم معاملات کی ہو تو پھر بائیکاٹ جیسی چیزیں نہیں آنی چاہئیں۔
_________________________
*بہار ریجمنٹ پر ہمیں فخر،ملک فوج کے ساتھ،مہاجر مزدوروں کیلئے 50 ہزار کروڑ روپے کا غریب کلیان روزگار ابھیان لانچ:وزیر اعظم*
واضح ہو کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے ہند۔چین لائن آف ایکچوئل کنٹرول پر شہید فوجیوں کو سلام کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں ان شہدا پر فخر ہے اور ملک فوج کے ساتھ ہے۔مودی نے ملک میں شدید کورونا بحران کے پیش نظر مہاجر مزدوروں کو ان کے اپنے آبائی گاؤں میں روزگار مہیا کرانے کے لئے 50،000 کروڑ روپے کی غریب کلیان روزگار اسکیم کو شروع کرتے ہوئے یہ بات کہی۔اس اسکیم میں چھ ریاستوں کے 116اضلاع کو شامل کیا گیا ہے۔ان میں راجستھان،مدھیہ پردیش،  جھارکھنڈ،اترپردیش،بہار اور اڈیشہ شامل ہیں۔ہر ضلع میں کم از کم 25000 مزدور اس مہم میں شامل ہوں گے۔انہوں نے کہا ’’بہار رجمنٹ کے جوانوں نے جو قربانی دی اس پر بہار کو فخر ہے۔میں ان شہدا کو سلام کرتا ہوں۔ملک فوج کے ساتھ ہے اور یہ ملک کے روشن مستقبل کے لئے ہے‘‘۔
_________________________
*دہلی ایل جی نے واپس لیا پانچ دن کے انسٹی ٹیوشن کورنٹائن کا فیصلہ*
واضح ہو کہ دہلی میں بڑھتے کورونا وائرس معاملات کے درمیان کورونا متاثر اور مشتبہ افراد کو کوارنٹائن کرنے کو لے کر دہلی حکومت اور لیفٹیننٹ گورنر کے درمیان چل رہی رسہ کشی آخر کار ختم ہوگئی دہلی کے ایل جی انل بیجل نے آخر کار ہفتہ کی شام کو پانچ دن کے انسٹی ٹیوشنل کوارنٹائن کا اپنا فیصلہ واپس لے لیا۔دہلی کی کیجریوال حکومت اس کے حق میں نہیں تھی۔اب دہلی حکومت کا کہنا ہے کہ فیصلہ واپس ہونے کے بعد راجدھانی کے لوگوں کو کافی مدد ملے گی۔خیال رہے کہ دہلی میں ہر کورونا پازیٹیو شخص کے کم سے کم پانچ دن کوارنٹائن سینٹر میں رہنے کا فیصلہ دہلی کے لیفٹیننٹ گورنر انل بیجل نے مرکزی حکومت کے مشورہ کے بعد کیا تھا۔دہلی حکومت کا کہنا تھا کہ کوارنٹائن سینٹر میں جانے کے ڈر سے لوگ ٹیسٹ کرانے سے بچیں گے۔ساتھ ہی کورونا متاثرین کے علاج میں مصروف ڈاکٹروں اور نرسوں پر دباو بہت زیادہ بڑھ جائے گا ۔
_________________________
*وزیر اعظم مودی کے بیان کے بعد ، راہل گاندھی نے پھر سوالات پوچھے*
واضح ہوکہ کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے وادی گالان میں ہندوستان چین تصادم کے فوجیوں کے مابین ہونے والے تشدد پر مرکزی حکومت پر مسلسل حملہ کر رہے ہیں۔ راہل گاندھی نے ایک ٹویٹ میں ایک بار پھر مودی سرکار کو نشانہ بنایا ہے۔ انہوں نے مودی حکومت سے پوچھتے ہوئے ٹویٹ کیا ، ‘وزیر اعظم نے چینی جارہیت کے سامنی ہندوستانی زمین حوالے کردیا ہے۔ اگر یہ زمین چین کی ہے تو پھر ہمارے فوجیوں کو کیوں مارا گیا۔ اسے کہاں مارا گیا؟
_________________________
*بی جے پی صدر نے راہل گاندھی کے بیان پر کی تنقید*
واضح ہوکہ بی جے پی صدر جے پی نڈا نے  راہل گاندھی پر سخت حملہ کیا۔ نڈا نے وزیر اعظم کے بارے میں راہل کے تبصرے پر سخت تنقید کی۔ انہوں نے کہا کہ “آپ کی رسومات ہندوستانی کنبہ کی رسوم نہیں ہیں۔” اس قسم کی زبان ہندوستانی ماحول میں پیدا ہونے والے فرد کی نہیں ہوسکتی ہے۔ ”انہوں نے الزام لگایا کہ حزب اختلاف کی وجہ سے وہ کرونا وائرس کے انفیکشن کے بحران کے دوران بھی سیاست کررہی ہے.
_________________________
*آگرہ-لکھنؤ ایکسپریس وے پر بھاری سڑک حادثہ ، ایک ہی کنبہ کے 5 افراد کی موت*
واضح ہوکہ کل نصیر پور کے علاقے میں آگرہ لکھنؤ ایکسپریس وے پر علی الصبح ایک شدید سڑک حادثہ پیش آیا۔ اس حادثے میں ایک معصوم سمیت پانچ افراد ہلاک ہوگئے۔ اطلاع کے بعد پولیس موقع پرپہنچ گئی۔ معلومات کے مطابق ، متاثرہ افراد کا کنبہ الہ آباد ضلع سے ہے ، جو دہلی سے واپس آرہا تھا۔ خدشہ ہے کہ یہ حادثہ کار کے ڈیوائڈر سے ٹکرانے کی وجہ سے ہوا ہے۔
_________________________
*ایودھیا کیس: اڈوانی ، جوشی ، کلیان سنگھ سمیت 5 ملزمان کے بیانات ریکارڈ کرنے کے لئے تاریخ مقرر*
واضح ہوکہ نیوز ادارہ نیوز 18 سے ملی رپورٹ کے مطابق ایودھیا میں ایودھیا اسٹرکچر مسمار کرنے کے سلسلے میں بیانات کو قلمبند کرنےکی تاریخ کا کل کورٹ نےاعلان کردیا جس کے مطابق  کورٹ 30 جون کو لال کرشن اڈوانی ، 1 جولائی کو مرلی منوہر جوشی ، 2 جولائی کو کلیان سنگھ اور 23 جون کو مہانت نارتیہ گوپال داس کا بیان قلمبند کرے گی۔ پانچ دیگر ملزمان کے بیانات بھی ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے ریکارڈ کیے جائیں گے۔ عدالت نے ملزمان کی فہرست سمیت ملزم کا پتہ بھی دے دیا۔ سب کے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے ہی بیانات ریکارڈ کیے جائیں گے۔پھر آگے کی کاروائی ہوگی
_________________________
*دنیا بھر میں کوروناوائرس سے 86.41 لاکھ افراد متاثر،مہلوکین کی تعداد 4.5 لاکھ سے متجاوز*
واضح ہو کہ دنیا بھر میں کورونا وائرس سے 86.41 لاکھ سے زائد لوگ جان لیوا وائرس کی زد میں آچکے ہیں جبکہ 4.59 لاکھ سے زیادہ افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔جان ہاپکنز یونیورسٹی کے سینٹر برائے سائنس اینڈ انجینئرنگ (سی ایس ایس ای) کے جاری کردہ تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق کورونا وائرس نے دنیا بھر میں 86،41،521 افراد کو متاثر کیا ہے اور 4،59،474 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ کووڈ ۔19 متاثرین کے معاملہ میں امریکہ دنیا بھر میں پہلے، برازیل دوسرے اور روس تیسرے نمبر پر ہے۔دوسری جانب اموات کے معاملہ میں امریکہ پہلے،برازیل دوسرے اور برطانیہ تیسرے نمبر پر ہے۔
_________________________
*ملک میں بازیابی کی شرح 54.13فیصد، پچھلے24 گھنٹوں میں 9،120 افراد ہوئے بازیاب*
واضح ہو کہ ہندوستان میں ایک ہی دن میں کورونا وائرس کے ریکارڈ14،516 کیسز سامنے آئے ہیں دریں اثنا راحت کی خبر یہ ہیکہ کورونا کو شکست دینے والوں کی تعداد بھی دو لاکھ سے تجاوز کر چکی ہے۔اب انفیکشن سے 2،13،830 افراد بازیاب ہوئے ہیں جبکہ 1،68،269 فعال معاملات ہیں۔وزارت کی وزارت صحت کے اعدادوشمار کے مطابق اب تک 54.13 فیصد مریض اس انفیکشن سے بازیاب ہوئے ہیں۔  ایک ہی دن میں 14،516 نئے کیس سامنے آنے کے بعد ملک بھر میں کیسوں کی تعداد بڑھ کر 3،95،048 ہوگئی ہے جبکہ ہلاکتوں کی تعداد 12،948 ہے جس میں گذشتہ ایک دن میں 375 افراد ہلاک ہوئے ہیں.
_________________________
*مہاراشٹرا میں کورونا متاثرین کل تعداد ہوٸ 1,28,205*
واضح ہوکہ مہاراشٹرا میں ایک دن میں 3,874 نۓ کیسز سامنے آۓ جس کے بعد کل تعداد 1,28,205 ہوگٸ ہے جبکہ ایک دن 1380 لوگ ٹھیک بھی ہوۓ ہیں جس سے شفا یاب ہونےوالوں کی تعداد 64,153 ہوگٸ ہے ،جبکہ ایک دن میں 160 لوگوں کی موت ہوٸ اور  اب تک کل 6,053 لوگوں کی موت  ہوچکی ہے اس وقت صوبے میں ایکٹیو کیسز کی تعداد 57,986 ہے۔
_________________________
*دلّی میں کورونا متاثرین کل تعداد ہوٸ 56,746*
واضح ہوکہ اُتر پردیش میں ایک دن میں 3,630 نۓ کیسز سامنے آۓ جس کے بعد کل تعداد 56,746 ہوگٸ ہے جبکہ ایک دن 7,725 لوگ ٹھیک بھی ہوۓ ہیں جس سے شفا یاب ہونےوالوں کی تعداد 31,294 ہوگٸ ہے جبکہ ایک دن میں 77 لوگوں کی موت ہوئی اب تک کل 2,112 لوگوں کی موت ہوچکی ہے اس وقت صوبے میں ایکٹیو کیسز کی تعداد 23,340 ہے۔
_________________________
*گجرات میں کورونا متاثرین کل تعداد ہوٸ 26,737*
واضح ہوکہ گجرات میں ایک دن میں 539 نۓ کیسز سامنے آۓ جس کے بعد کل تعداد 26,737 ہوگٸ ہے جبکہ ایک دن 535 لوگ ٹھیک بھی ہوۓ ہیں جس سے شفا یاب ہونےوالوں کی تعداد 18,702 ہوگٸ ہے ،جبکہ ایک دن میں 20 لوگ کی موت ہوئی اب تک کل 1,639 لوگوں کی موت بھی ہوچکی ہے اس وقت صوبے میں ایکٹیو کیسز کی تعداد 6,396 ہے۔
_________________________
*اتر پردیش میں کورونا متاثرین کل تعداد ہوٸ 17,135*
واضح ہوکہ اُتر پردیش میں ایک دن میں 541 نۓ کیسز سامنے آۓ جس کے بعد کل تعداد 17,135 ہوگٸ ہے جبکہ ایک دن 374 لوگ ٹھیک بھی ہوۓ ہیں جس سے شفا یاب ہونےوالوں کی تعداد 10,369 ہوگٸ ہے جبکہ ایک دن میں 22 لوگوں کی موت ہوئی اب تک کل 529 لوگوں کی موت ہوچکی ہے اس وقت صوبے میں ایکٹیو کیسز کی تعداد 6,237 ہے۔
_________________________
*راجستھان میں کورونا متاثرین کل تعداد ہوٸ 14,537*
واضح ہوکہ راجستھان میں ایک دن میں 381 نۓ کیسز سامنے آۓ جس کے بعد کل تعداد 14,537 ہوگٸ ہے جبکہ ایک دن 277 لوگ ٹھیک بھی ہوۓ ہیں جس سے شفا یاب ہونےوالوں کی تعداد 11,274 ہوگٸ ہے ،جبکہ ایک دن میں 4 لوگ کی موت ہوئی اب تک کل 337 لوگوں کی موت بھی ہوچکی ہے اس وقت صوبے میں ایکٹیو کیسز کی تعداد 2,926 ہے۔
_________________________
*پنجاب میں کورونا متاثرین کل تعداد ہوٸ 3,952*
واضح ہوکہ پنجاب میں ایک دن میں 120 نۓ کیسز سامنے آۓ جس کے بعد کل تعداد 3,952 ہوگٸ ہے جبکہ ایک دن 42 لوگ ٹھیک بھی ہوۓ ہیں جس سے شفا یاب ہونےوالوں کی تعداد 2,678 ہوگٸ ہے ،جبکہ ایک دن میں 6 لوگ کی موت ہوئی اب تک کل 98 لوگوں کی موت بھی ہوچکی ہے اس وقت صوبے میں ایکٹیو کیسز کی تعداد 1,176 ہے۔
_________________________
*دہلی پولیس کی چارج شیٹ یکطرفہ ، جمعیة علماء ہند قانونی طریقہ اختیار کرےگی*
واضح ہوکہ جعیة کے صدر مولانا سید ارشد مدنی صاحب نے کہا کہ کرونا کے خلاف موثر اور فیصلہ کن جنگ لڑنے کی جگہ حکومت کو اپنے طے شدہ نشانے کو پورا کرنے کی زیادہ جلدی ہے۔ دوسرے لفظوں میں کہا جاسکتا ہے کہ اقتدار کا ناجائز فائدہ اٹھاکر کچھ لوگ بے گناہوں کے خلاف قانونی کارروائی کر کے فرقہ پرستی کے ایجنڈے کو آگے بڑھانے کی مذموم کوشش میں مصروف ہیں۔ دہلی فسادات پر دائر دہلی پولیس کی چارج شیٹ کو یکطرفہ، متعصبانہ، اور خاص ذہنیت کی تکمیل پر مبنی قانون کی خلاف ورزری قرار دیتے ہوئے جمعیۃ علمائے ہند کے صدر مولانا سید ارشد مدنی نے کہا کہ جمعیۃ علماء ہند متاثرین کو انصاف دلانے کے لئے ان شاء اللہ تمام ممکنہ قانونی طریقے اختیار کرے گی۔ اس کے لئے وکلاء کی ٹیم تشکیل کردی گئی ہے۔انہوں نے سی اے اے کے خلاف تحریک چلانے والوں کی اندھادھند گرفتاریاں اور دہلی فسادات میں ہورہی یکطرفہ کارروائیوں پر کہا کہ یہ کتنے افسوس کی بات ہے کہ لاک ڈاؤن کے درمیان بھی خاص طور پر مسلم اقلیت کے خلاف اپنے خفیہ ایجنڈے کو پورا کرنے کے لئے ارباب سیاست کی طرف سے پولیس کو استعمال کیا جا رہا ہے۔