ہندو گاہک کا مسلم ڈلیوری بوائے سے آرڈر لینے سے انکار، زومیٹو نے دیا سخت جواب

ایک ہندو گاہک نے زومیٹو کے ڈلیوری بوائے سے صرف اس لئے کھانے کا آرڈر لینے سے انکار کر دیا کیونکہ وہ مسلمان تھا۔ زومیٹو کی طرف سے گاہک کو سخت جواب دیا گیا ہے۔

آن لائن فوڈ سروس ویب سائٹ زومیٹو کے ایک ڈلیوری بوائے سے ایک گاہک نے صرف اس لئے کھانا نہیں لیا کیوںکہ وہ مسلمان تھا۔ اتنا ہی نہیں اس گاہک نے زومیٹو کو مخاطب کرتے ہوئے اس معاملہ پر ایک ٹوئٹ بھی کر دیا اور اس نے فوڈ کمپنی پر ہی سوال اٹھا دیا۔

اس گاہک کو پہلے تو زومیٹو کے ٹوئٹر ہینڈل سے جواب دیا گیا، اس کے بعد زومیٹو کے بانی دپیندر گوئل نے بھی اسے سخت جواب دیا۔ زومیٹو کی طرف سے لکھا گیا، ’کھانے کا کوئی مذہب نہیں ہوتا، کھانا خود ایک مذہب ہے‘۔
زومیٹو کے بانی دپیندر گوئل نے ٹوئٹر پر لکھا، ’’ہم آئیڈیا آف انڈیا اور ہمارے گاہکوں-پارٹنرز کے تنوع پر ناز کرتے ہیں۔ ہمارے اصولوں کی وجہ سے کاروبار کو بھی نقصان ہوتا ہے تو بھی ہمیں کوئی دکھ نہیں ہوگا۔ 
زومیٹو اور اس کے بانی کی طرف سے اس معاملہ پر جو جواب دیا گیا ہے اسے سوشل میڈیا پر خوب پذیرائی حاصل ہو رہی ہے۔ ساتھ ہی پنڈت امت شکلا جس نے اس معاملہ کو اٹھایا اور ٹوئٹ کیا تھا اسے لوگ کافی کھری کھوٹی سنا رہے ہیں۔