مدرسوں میں ’گوڈسے‘ اور ’پرگیہ‘ پیدا نہیں کیے جاتے: اعظم خان

رامپور: سماجوادی پارٹی کے قدآور رہنما اور رامپور سے موجودہ رکن پارلیمان اعظم خان نے کہا ہے کہ مدرسے کبھی ناتھورام گوڈسے یا پرگیہ سنگھ ٹھاکر جیسے لوگوں کو تیار نہیں کرتے ہیں۔ اعظم خان مدرسوں کو مرکزی دھارے میں لانے کے مودی حکومت کے منصوبہ پر رد عمل ظاہر کر رہے تھے۔

اعظم خان نے صحافیوں سے بات چیت میں کہا، ’’مدرسے ناتھورام گوڈسے جیسے مزاج والے یا پرگیہ ٹھاکر جیسی شخصیت پیدا نہیں کرتے ہیں۔‘‘ انہوں نے مزید کہا، ’’پہلے اعلان کریں کہ ناتھو رام گوڈسے کے نظریات کی تشہیر کرنے والوں کو جمہوریت کا دشمن قرار دیا جا ئے گا۔
اعظم خان نے کہا کہ اگر مرکزی حکومت مدارس کی مدد کرنا چاہتی ہے تو ان کی ضروریات کو پورا کریں۔ انہوں نے کہا، ’’مدارس اسلامیہ میں دینی تعلیم دی جاتی ہے اور ساتھ میں انگریزی، ہندی اور ریاضی بھی پڑھائی جاتی ہے، یہ ہمیشہ سے کیا جا رہا ہے۔ اگر آپ مدد کرنا چاہتے ہیں تو ان کے انفراسٹرکچر میں بہتری لانے میں مدد کریں۔ مدرسوں کے لئے عمارتوں، فرنیچر اور دوپہر کے کھانے کا انتظام کیا جائے۔‘