واجپئی کے احترام میں سات دن کے قومی سوگ کا اعلان،واجپئی ایک عظیم سیاست داں تھے:ممتابنرجی , واجپئی کی رحلت میرا ذاتی نقصان ہے:عمر عبداللہ,قومی رہنماوں کابزرگ لیڈر کو خراج عقیدت 

حکومت نے سابق وزیراعظم اٹل بہاری واجپئی کے انتقال پر انکے احترام میں سات دن کے قومی سوگ کا اعلان کیاہے۔وزیراعظم نریندرمودی کی صدارت میں ہوئی مرکزی کابینہ کی میٹنگ میں اس سلسلہ میں فیصلہ کیاگیا۔وزارت داخلہ کے مطابق مسٹر واجپئی کی یاد میں ملک میں 16 سے 22اگست تک قومی سوگ منایاجائیگا اور اس دوران سبھی سرکاری عمارتوں پر قومی پرچم سرنگوں رہے گا۔اس مدت کے دوران کوئی سرکاری تقریب منعقدنہیں ہوگی۔

مغربی بنگال کی وزیراعلیٰ ممتا بنرجی نے سابق وزیر اعظم اٹل بہاری واجپئی کے انتقال پر آج افسوس ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ ان کا جانا ملک کے لیے ایک بڑا نقصان ہے۔ممتابنرجی واجپئی حکومت میں ریلوے کی وزیرتھیں۔انہوں نے کہا کہ ان کے ذہن میں ان کی یادیں ہمیشہ آتی رہیں گی۔انہوں نے ٹویٹ کیاکہ انتہائی دکھ ہے کہ عظیم سیاستدان اور سابق وزیر اعظم مسٹراٹل بہاری واجپئی ہمارے درمیان نہیں ہیں۔ان کا انتقال ہمارے ملک کے لیے بڑانقصان ہے۔میرے ذہن میں ان کی یادیں ہمیشہ رہیں گی۔میری تعزیت ان کے خاندان اور شائقین کے ساتھ ہیں۔

واجپئی کے احترام میں دہلی حکومت کے تمام دفاتر اور اسکولوں میں تعطیل کا اعلان
سابق وزیر اعظم ‘بھارت رتنا’ اٹل بہاری واجپئی کے انتقال کے پیش نظر دہلی حکومت کے تمام دفاتر، اسکول اور دیگر اداروں میں جمعہ کو تعطیل رہے گی۔دہلی کے نائب وزیر اعلی منیش سسودیا نے آج ٹویٹ کر کے یہ اطلاع دی۔انہوں نے لکھا کہ ہردل عزیز لیڈر مسٹر واجپئی کے احترام میں دہلی حکومت کے تمام دفاتر، پبلک و پرائیویٹ اسکول اور دیگر ادارے جمعہ کوبندرہیں گے۔
واجپئی کی رحلت میرا ذاتی نقصان ہے:عمر عبداللہ
نیشنل کانفرنس کے نائب صدر اور سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے سابق وزیراعظم اٹل بہاری واجپئی کی رحلت کو ذاتی نقصان قرار دیا ہے۔انہوں نے کہا کہ میں نے آنجہانی راہنما سے بہت کچھ سیکھا ہے۔عمرعبداللہ نے اپنے ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ واجپئی صاحب نہیں رہے۔