ترکی کے صدارتی انتخاب میں اردغان کی کامیا بی پر علماء کونسل کی مبارکباد

ممبئی ۲۵ جون آل انڈیاعلماء کونسل کے جنرل سیکریٹری مولانا محموداحمد خاں دریابادی نے جمہوریہ ترکی کے صدارتی انتخاب میں طیب اردغان کی زبردست کامیابی پر کونسل کی طرف سے مبارکباد دی ہے ـ ممبئی میں موجود ترکی کے قونصل جنرل کی معرفت ترکی کے صدر کو لکھے گئے اپنے مکتوب میں مولانا نے ترکی سے ہندوستانی مسلمانوں کے قدیم جذباتی تعلق اور تحریک خلافت کے دوران مسلمانوں کے ساتھ ہندوستان کے غیر مسلم برادران کی قائدانہ شمولیت کا ذکر کرتے ہوئے امید ظاہر کی ہے کہ اردغان کی سربراہی میں نہ صرف ترکی ہمہ جہت ترقی کرے گا بلکہ دنیا بھر کے مظلومین خصوصا ستم زدہ مسلمانوں کے لئے ان کا اخلاقی تعاون حسب سابق حاصل ہوتا رہے گا ـ
خط کا متن درج ذیل ہے ـ

بخدمت عالی جناب عزت مآب طیب ادوگان صاحب
منتخب صدر ـ جمہوریہ ترکی.

محترم المقام!
السلام علیکم ورحمت اللہ وبرکاتہ
سب سے پہلے بہت بڑی اکثریت سے جمہوریہ ترکی کے صدر منتخب ہونے پر دل کی اتھاہ گہرائیوں سے مبارکباد قبول فرمائے ـ
ہندوستانی مسلمانوں کے لئے آپ کی کامیابی اس لئے بھی ذیادہ اھمیت رکھتی ہے کہ ہم ہندوستانی مسلمانوں کا ترکی سے ہمیشہ جذباتی تعلق رہا ہے، ۱۹۲۴ سے قبل جب انگریز سامراج کے ساتھ ملکر اسلام دشمن کچھ لوگ خلافت اسلامیہ کے خلاف شازش کررہے تھے اس وقت بھی ہندوستانی مسلمانوں نے اپنی بےسروسامانی کے باوجود ترکی کی اسلامی خلافت کے حق میں زبردست تحریک چلائی تھی، دوسری جنگ عظیم کے موقع پر بھی ہندوستانی مسلمانوں کی تمام تر ہمدردیاں ترکی کے ساتھ تھیں …… اور سب سے ذیادہ اہم بات یہ ہے کہ ہندوستان کی غیر مسلم اکثریت بھی مسلمانوں کے شانہ بشانہ ترکی کے حق میں چلائی جانے والی تحریکوں میں شریک تھی ـ
آپ کے انتخاب کے بعد پوری امید ہے کہ جمہوریہ ترکی دن دونی رات چوگنی ترقی کرے گا …. اور اسی کے ساتھ یہ بھی امیدہے کہ ساری دنیا کے مظلومین خصوصا مسلمانوں کو آپ کی اخلاقی حمایت حسب سابق حاصل ہوتی رہے گی ـ
ہندوستان کے علماء کرام اور تمام ہندوستانیوں خصوصامسلمانوں کی دعائیں اپ کے ساتھ ہیں ـ
ایک بار پھر اپ کومبارکباد دیتے ہوئے ہم ترکی کے عوام کو بھی ان حسنِ انتخاب پر مبارکباد پیش کرتے ہیں ـ……. انجناب کی صحت وسلامتی کے ساتھ آپ کی سربراہی میں ترکی کی ہمہ جہت ترقی کے لئے دعا بھی گو ہیں ـ

محمود احمد خاں دریابادی
جنرل سکریٹری آل انڈیا علماء کونسل ـ
ممبئی