جعلی سفیروں کا انکشاف ،جعل سازوں سے ہوشیار رہیں چندہ دہندگان :جمعیۃعلماء

ممبئی ۷؍ جونرمضان المبارک میں اللہ کی خاص رحمت برستی ہے اور نیکیوں کا اجر کئی گنا ہو جاتا ہے ،مسلمانان ہند عموماًاس بابرکت مہینہ میں اپنے مال کی زکوۃ نکالتے ہیں ۔اور اس کو صحیح مصرف تک پہونچانے کی کوشش کرتے ہیں ۔ عروس البلاد ممبئی میں ملک کے کونہ کونہ سے مدارس عربیہ کے سفراء و محصلین بھی جوق در جوق زکوۃ و صدقات کی وصولی کے لئے تشریف لاتے ہیں،اور اہل خیر حضرات ان کا تعاون کرتے ہیں۔ برسوں سے مدارس عربیہ اور ان کے نمائندوں کی تحقیق اور ان کے لئے اجراء تصدیق کا کام جمعیۃعلماء مہاراشٹراپنے وسائل کے ذریعہ کرتی ہے۔برسوں سے مدارس اور ان کے نمائندوں کی تحقیق اور ان کے لئے اجراء تصدیق کا کام جمعیۃ علماء مہاراشٹر اپنےملک کے چپہ چپہ سے آنے والے ان سفراء مدارس کی کبھی کبھی تو یہ تصدیق مشکل ہوجاتی ہے کہ جس مدرسہ کے نام پر زکوٰۃ وصول کی جارہی ہے اس کا کوئی وجود ہے بھی یا نہیں ؟ ایسے میں زکوٰۃ کا صحیح استعمال کے لئے مدارس اور نمائندوں کی تحقیق اور ان کی تصدیق کا کام جمعیۃعلماء اپنے وسائل کے ذریعہ کرتی ہے ۔الحمد للہ مہاراشٹربالخصوص ممبئی کے مسلمان اس کو اعتماد کی نظر سے دیکھتے ہیں ۔لیکن بعض مفاد پرست اس کی بدنامی کا سبب بنتے ہیں۔چنانچہ ایسا ہی واقعہ گذشتہ دنوں ایک صاحب خیر کے پاس مدرسہ عربیہ دینیہ جو ہر العلوم تڈولہ،بسوا کلیان ضلع بیدر صوبہ کرناٹک کے نمائندہ ’’مولانا محمدپرویز‘‘ نے چندہ حاصل کرنے کے لئے جمعیۃعلماء مہاراشٹر کی تصدیق REF.NO.01-JUM-1736-TM-2018 DATE:11/05/2018ُٰکی رنگین کاپی پیش کی ،صاحب خیر کو تصدیق نامہ مشکوک لگا ،اس لئے انہوں نے جمعیۃعلماء مہاراشٹر کے دفتر واقع امام باڑہ کمپاؤنڈ،ممبئی ۹ میں بذریعہ فون رابطہ کیا ۔دفتر سے بتایا گیا کہ اس نمبر اور تاریخ میں مدرسہ احسن المعارف ،نالا سوپارہ ضلع پال گھر کے نمائندہ مولانا نثار احمد کے لئے جاری ہوا ہے۔ابھی تحقیق جاری ہی تھی کہ نمائندہ وہاں سے فون کرنے کے بہانے سے فرار ہوگیا ،اور تلاش بسیار کے بعد بھی اس کا سراغ نہ مل سکا ۔ایسا ہی ایک اور واقعہ مدرسہ دار العلوم عزیزیہ،اونسی گوٹ ضلع مدھوبنی صوبہ بہار کے نمائندے حافظ شہادت اللہ ولد ہارون خان،ساکن اونسی ببھنگاما،پوسٹ اونسی،بسفی ضلع مدھوبنی بہار نےREF.NO.01-JUM-1393-TM-2017 سال گزشتہ مدرسہ اسلامیہ عربیہ تعلیم القرآن ،تارا بہال ضلع جامتاڑا جھار کھنڈ کی تصدیق کی رنگین فوٹو کاپی پر اپنے مدرسہ کا نام اور اپنا فوٹو چسپاں کر کے چندہ کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑا گیا ۔واضح رہے اس ریفرینس نمبر کی تصدیق حافظ سعید الرحمٰن نامی شخص نے حاصل کی تھی،لیکن چندہ میں مالی بد عنوانی کے الزام میں پکڑے جانے پر ان کی تصدیق ضبط کر لی گئی تھی ۔مزید ایک اور واقعہ گزشتہ کل مدرسہ تعلیم القرآن محلہ کوٹلہ بڑی طرف شیخ پورہ قدیم ضلع سہارن پور یوپی کے نمائندے قاری محمد اطہر ،ساکن اوماہی کوٹہ ضلع سہارن پورREF.NO.01-JUM-1021-TM-2017کا پیش آیا،انہوں نے گزشتہ سال کی رسید کے مثنیٰ میں تحریف کردی ،صرف تحریف ہی نہیں بلکہ ریکارڈ ہی دوسری رسید بک سے پیش کیا۔ان کو سال گزشتہ کا ریکارڈ دکھایا گیااور ان کی اس نازیبا حرکت پر جملہ دستاویزات ضبط کر کے دفترجمعیۃعلماء مہاراشٹر ،امام باڑہ کمپاؤنڈ میں جمع کرادی ۔برادران اسلام بالخصوص ائمہ مساجد سے التماس ہے کہ اپنے اپنے طور پر بھی مدارس کے محصلین کی تحقیق کرلیا کریں ،جمعیۃعلماء مہاراشٹر اپنے وسائل بھر مدراس کی تحقیق کا اہتمام کرتی ہے ،مگر اس کے باوجود ایسے دھوکہ باز لوگ پوری ملت کی بد نامی کا باعث بن جاتے ہیں ۔