مودی حکومت کی ’وعدہ فراموشی‘ کیخلاف یوتھ کانگریس کی آر پارکی لڑائی

سوشل میڈیا، عوامی تحریک،عمومی اجلاس ، عوامی سطح پر تبادلہ خیال اور ہم فکر تنظیموں کے ساتھ افہام و تفیہم کے ذریعہ نوجوانوں تک اپنی بات پہنچانے کی کوشش کرے گی نئی دہلی5جون : یوتھ کا نگریس نے آئندہ لوک سبھا انتخابات کے پیش ن

نئی دہلی5جون : یوتھ کا نگریس نے آئندہ لوک سبھا انتخابات کے پیش نظر نریندر مودی حکومت کی وعدہ خلافی کے خلاف نوجوانوں کے درمیان بڑے پیمانے پر رابطہ مہم شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ کانگریس کے نوجوان یونٹ کا کہنا ہے کہ وہ سوشل میڈیا، عوامی تحریک،عمومی اجلاس ، عوامی سطح پر تبادلہ خیال اور ہم فکر تنظیموں کے ساتھ افہام و تفیہم کے ذریعہ نوجوانوں تک اپنی بات پہنچانے کی کوشش کرے گی۔آل انڈیا کانگریس کمیٹی کے جوائنٹ سکریٹری اور یوتھ کانگریس کے انچارج نے کہا کہ بے روزگاری، تعلیمی نظام کی حالت زار، کسانوں کی ابتری، مہنگائی اور خواتین کے خلاف جرائم آج کے وقت کے اہم تشنہ مسائل ہیں ۔ یہ حکومت ان مسائل کو حل کرنے میں مکمل طور ناکام رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان مسائل کو لے کر ہم تحریک کی بنیاد ڈالیں گے اور علاوہ ازیں ہم دوسرے ذرائع سے بھی نوحواتن تک پہنچنے کی کوشش کریں گے۔ ہم ان مسائل کو لے کر ملک کے نوجوانوں سے رابطہ کریں گے اور ان سے واضح کریں گے کہ مودی سرکار نے ان کے ساتھ کس طرح فریب کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم سوشل میڈیا کا استعمال کرنے کے ساتھ یونیورسٹیوں اور دوسرے تعلیمی اداروں میں بھی نوجوانوں سے رابطہ کریں گے۔عوامی چیت کے فورم اور ہم فکر تنظیموں کے ذریعہ ہم ان مسائل کو نوجوانوں سے بیان کریں گے ۔ حالیہ دنوںیوتھ کانگریس نے ان مسائل کو لے کر بھارت بچاؤ عوامی تحریک کا آغاز ہے ۔ موصوف نے یہ بھی کہا کہ لوک سبھا انتخابات سے پہلے یوتھ کانگریس یوپی اور بہار جیسی ریاستوں میں تنظیم کو مضبوط بنانے کی سمت کوشش کرے گی جہاں کانگریس کی پوزیشن زیادہ مضبوط نہیں ہے۔ بی جے پی حکومت پر ملک میں فرضی قوم پرستی اور مذہبی تعصب کو فروغ دینے کا الزام لگاتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یہ حکومت مسائل کو مخفی رکھنے کیلئے غیر معقول طور پر پروپیگنڈہ کو ہوا دیتی ہے تاکہ عوام ان کے دام تزویر میں الجھ کر رہ جائے ۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ہم ان کی ان کوششوں کو بھی ناکام بنانے کی کوشش کریں گے ۔