*بڑھتے عصمت دری کے واقعات پر مالونی کی تنظیموں اور عوام کا تاریخی احتجاج*

آمناسامنا میڈیا : مورخہ 20 اپریل کو مالونی کی مختلف تنظیموں نے ملک میں بڑھتے ریپ کے واقعات کی مذمت میں ایک مشترکہ احتجاجی ریلی نکالی، جو مالونی سویرا ٹاکیز سےشروع ہوکر فائربریگیڈ اسٹیشن پر اختتام پذیر ہوئی، عوام کا زبردست ازدہام ریلی میں دیکھنے کو ملا، جنھوں نے ریلی میں مختلف نعروےکے زریعے اپنے جذبات و غصے کا اظہار کیا، ریلی کے اختتام پر مختلف تنظیموں کے نمائندوں نے اظہار خیال بھی کیا. *علیم الدین ملا* اپنا ممبئی فاونڈیشن کے صدر نے کہا کہ پھانسی کی سزا ک علاوہ دوسری کوئی سزا قابل قبول نہیں ہے. جماعت اسلامی کے نمائندے *جناب انور شیخ* نے کہا کہ ریپ کیسیس کی فاسٹ ٹریک کورٹ میں سنوائی ہو اور مجرموں کو عبرت ناک سزا ملیں. ساتھ ہی پورنوگرافی اور شراب نوشی جو عصمت دری کے اہم تر عوامل ہیں اس پر بھی پابندی کا مطالبہ کیا. سمۓ نامی این جی او کے صدر *امجد شیخ* نےکہا کہ ہم بھی پھانسی سے کم کسی سزا پر ماننے والے نہیں ہے بلکہ اگر ہمارا مطالبہ پورا نہ ہوا تو ہم اس تحریک کو مزید آگے بڑھانے پر غور کرینگے.
واضح رہے کہ ریلی میں ترنگا جھنڈے کے اور پلے کارڈز کے علاوہ کسی بھی جماعت، این جی او، سیاسی تنظیموں کے نام کے استعمال نہیں کیا گیا.

*ریلی کو کامیاب بنانےمیں عوام الناس کے علاوہ اپنا ممبئی فاؤنڈیشن جماعت اسلامی ہند، ایس آئی او، یوتھ ونگ،سمۓ، یوا واہتک سیناکی 40 آٹو رکشا،ندائے حق، مالونی وائس اور دیگر نوجوانان و سماجی شخصیات کا بھر پور تعاون رہا*.