بزم ابو الحسن علی میاں ندوی رحمۃاللہ علیہ کا سالانہ اختتامی اجلاس پورے تزک واحتشام کے ساتھ زیر صدارت حضرت مولانا محمد زکریا صاحب صدر جمعیہ علماء میرا بھائیندر منعقد ہوا،

گذشتہ ۱۲ اپریل کو جامعہ الابرار ہوائ پاڑہ گورائ پاڑہ وسئ ایسٹ میں جمعیہ الطلبہ کے زیر اہتمام بزم ابو الحسن علی میاں ندوی رحمۃاللہ علیہ کا سالانہ اختتامی اجلاس پورے تزک واحتشام کے ساتھ زیر صدارت حضرت مولانا محمد زکریا صاحب صدر جمعیہ علماء میرا بھائیندر منعقد ہوا، اس موقع پر دیگر ثقافتی پروگرام کے ساتھ ترتیل وحدر قرآن مجید، تقاریر ونعت اور مضمون نویسی کا طلبہ کے درمیان بہت زبردست مسابقہ ہوا اور کامیاب طلبہ قیمتی انعامات کے مستحق قرار پائے، مسابقہ میں حکم کے فرائض دارالعلوم عزیزیہ میراروڈ کے استاذ مفتی توحید عالم قاسمی اور جامعہ اشرف العلوم نالاسوپارہ کے مفتی طیب قاسمی انجام دے رہے تھے ۔صدر مجلس اور حکم صاحبان کے علاوہ مولانا آفتاب عالم، پروفیسر اشراق صاحب باندرہ نے قلبی تاثرات و مسرت کا اظہار فرماتے ہوئے کہا کہ جامعہ تعلیمی اعتبار سے قابل صد ستائش ہے ،طلبہ کا پروگرام بہت دلچسپ رہا ،طلبہ واساتذہ نے بہت محنت کی ہے، عوام و خواص دونوں طرح کے لوگوں کو اس ادارہ کی ترقی بطور خاص تعمیری کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لینا چاہئے ،مولانا محمد شمیم اختر ندوی ممبئ کے ایک ذی استعداد فعال عالم دین ہیں انکے دور اہتمام میں جس سرعت کے ساتھ جامعہ ترقی پذیر ہے اس سے یہ اندازہ لگانا مشکل نہیں کہ مستقبل کا یہ ایک بہترین ادارہ ہوگا اور یہاں کے طلبہ دینی و عصری دونوں علوم میں ممتاز ہونگے،
مولانا جنید عالم قاسمی، مولانا صابر حسین قاسمی، مولانا عارف قاسمی، مولانا واجد حسین قاسمی مولانا ممتاز قاسمی مولانا وثیق پلہار کے علاوہ بڑی تعداد میں ملاڈ ،وسئ اور نالاسوپارہ کے عوام خواص شریک تھے۔پروگرام دو زمروں میں منقسم تھا ایک کی نظامت عربی دوم کے طالب علم محمد مصدق نے کی اور ایک کی شعبہ حفظ کے متعلم حافظ اکرم نے کی،یہ دونوں طلبہ بھی عمدہ نظامت کے لیے انعامات سے نوازے گئے۔اخیر میں جامعہ کے مہتمم مولانا شمیم اختر ندوی نے مہمانوں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے فرمایا کہ الحمدللہ شعبہ ناظرہ حفظ وقرات اور عالمیت کے ساتھ جامعہ میں عصری تعلیم کا بھی نظم ہے ۔امسال مہاراشٹر بورڈ سے ۱۷ طلبہ نے آٹھویں جماعت کا امتحان دیا ہے۔جامعہ میں محلے کے غریب اسکولی بچوں کے لیے بلاتفریق مذھب ایک تا ساتویں فری کوچینگ کلاسیس کا بھی نظم ہے ۔

الحمداللہ اس
*جامعہ کوچینگ کلاسیس*سے 40 بچے مستفید ہو رہے ہیں ۔جامعہ میں اقامتی طلبہ 85 اور غیراقامتی 90 ہیں ۔کل چھ اساتذہ اور دو ملازم خدمات پر مامور ہیں ۔آپ سب شرکاء جامعہ کو اپنی مناجات میں ضرور یاد رکھیں ۔