آرمی چیف سے چائے مٹھائی پر کروں گا گفتگو، بتاؤں گا حقیقت: مولانا بدرالدین اجمل  فوج کے سربراہ نے کہا تھا کہ آسام میںیوڈی ایف جس طرح سے بڑھ رہی ہے اس کے مضمرات کے بارے میں ہم سب کو سوچنا ہوگا۔

نئی دہلی یکم مارچ:آسام میں یوڈ ی ایف کے بھاجپا سے بھی تیز بڑھنے کے فوجی سربراہ کے بیان کے ایک ہفتے بعد اب یوڈی ا یف کے سربراہ مولانابدرالدین اجمل نے ان کے ساتھ چائے اور مٹھائی کے ساتھ بات چیت کرنے کی پیشکش کی ہے۔ انہوں نے کہاہے کہ وہ فوج کے سربراہ ہیں ،انہیں حقائق سے آگاہ کرانا چاہتے ہیں۔بدرالدین اجمل لوک سبھا کے ایم پی ہیں۔ انڈین ایکسپریس کی خبرکے مطابق انہوں نے دہلی میں کہاکہ میں ان سے ملوں گا، میں ان کے ساتھ چائے پیوں گا، مٹھائی کھاؤں گا گرچہ مجھے ذیابیطس ہے۔ میں نے ان کے بیان کے متعلق غلط فہمیوں کو دور کروں گا۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ہم جو کچھ ہیں اور جو کرتے ہیں ،انہیں حقائق کے بارے بتائیں گے۔غور طلب ہے کہ 21 فروری کو دہلی میں منعقد ایک سیمینار میں فوجی سربراہ بپن راوت نے کہا تھا کہ شمال مشرق میںیوڈی ایف تیزی سے آگے بڑھ رہی ہے۔ بی جے پی کا آج تک کا جو سفر رہا ہے اس کے مقابلے میں یوڈی ایف کی ترقی بہت تیزی سے ہورہی ہے ۔ یوڈی ایف آسام میں مسلمانوں کی آواز اٹھانے والی پارٹی ہے اور اہم مسائل پر بیباک اقلیتوں کی آواز کو بلند کیا ہے ۔ واضح ہو کہ فوج کے سربراہ نے کہا تھا کہ آسام میںیوڈی ایف جس طرح سے بڑھ رہی ہے اس کے مضمرات کے بارے میں ہم سب کو سوچنا ہوگا۔ فوج کے سربراہ کے اس بیان کے آتے ہی ان کے حق اور مخالفت میں تمام سیاسی جماعتوں کے رہنماؤں نے بیان دیے تھے۔آسام میں مولانا بدرالدین اجمل کی سیاسی گرفت کے پیچھے ان کی اپنی سیاسی سوجھ بوجھ کے علاوہ ریاست کے حالات کا بھی اچھا خاصا حصہ ہے۔ آسام بھارت کا ایک ایسی ریاست ہے، جہاں قریب 34 فیصد آبادی مسلمانوں کی ہے۔ آسام کے 2006 کے انتخابات کے بعد بدرالدین اجمل نے پلٹ کر نہیں دیکھا اور ریاست کی سیاست میں بڑھتے گئے۔تین سال کے بعد 2009 میں ہوئے لوک سبھا انتخابات میں خود الیکشن جیت کر لوک سبھا پہنچے۔ 2011 کے آسام اسمبلی انتخابات میں یوڈی ا یف کے 18 ممبر اسمبلی جیتنے میں کامیاب رہے۔اس کے پہلے بدرالدین اجمل نے فوج کے سربراہ بپن راوت کے بیان پر سخت ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ صدر، وزیر اعظم اور وزیر داخلہ سے ملنے کا وقت مانگیں گے اور ان کی پارٹی کے ممبران اسمبلی کا وفد ان سے مل کر اپنی بات رکھے گا۔ انہوں نے منگل کو وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ سے ملاقات کر انہیں دو صفحے کا میمو رنڈم بھی دیا۔